نیکٹاکو چاروں صوبوں او رآزاد کشمیر و گلگت بلتستان تک و سعت دینے کا فیصلہ ، وزارت ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ فروری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-07
تاریخ اشاعت: 2015-02-07
تاریخ اشاعت: 2015-02-07
تاریخ اشاعت: 2015-02-07
تاریخ اشاعت: 2015-02-07
تاریخ اشاعت: 2015-02-07
تاریخ اشاعت: 2015-02-07
تاریخ اشاعت: 2015-02-07
تاریخ اشاعت: 2015-02-07
تاریخ اشاعت: 2015-02-07
تاریخ اشاعت: 2015-02-07
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:01:42 وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:05:17 وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:05:21 وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:05:23 وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:05:27 وقت اشاعت: 22/02/2017 - 11:05:29 اسلام آباد کی مزید خبریں

تلاش کیجئے

نیکٹاکو چاروں صوبوں او رآزاد کشمیر و گلگت بلتستان تک و سعت دینے کا فیصلہ ، وزارت داخلہ اور نیکٹا حکام کے مابین مشاؤر ت شروع ، وزیراعظم کی منظوری کے بعد عمل درآمد شروع کر دیا جائے گا،نیکٹا کو توسیع دینے کا مقصد دہشت گردی کے خلاف کوششوں کو مذید تیز کرنا ہے ،ذرائع وزارت داخلہ

اسلام آباد( اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔ 7فروری۔2015ء) دہشت گردی کے روک تھام کے سلسلے میں قائم کئے جانے والے ادارے نیشنل کاونٹر ٹیرارزم اتھارٹی (نیکٹا) کو چاروں صوبوں او رآزاد کشمیر و گلگت بلتستان تک و سعت دینے کے لئے وزارت داخلہ اور نیکٹا حکام کے مابین مشاؤر ت کا سلسلہ جاری ہے وزیراعظم کی منظوری کے بعد عمل درآمد شروع کر دیا جائے گا ،چاروں صوبو ں بشمول گلگت بلتستان کے وزراء اعلیٰ اور ازاد کشمیر کے وزیر اعظم نیکٹا کے سربراہ ہونگے، وزارت داخلہ کے ذرائع کے مطابق نیکٹا کو چاروں صوبوں گلگت بلتستا ن اور آزاد کشمیر تک توسیع دینے کا مقصد دہشت گردی کے خلاف کوششوں کو مذید تیز کرنا اور چاروں صوبوں کو دہشت گردی کے خلاف جنگ میں عملی اقدامات اٹھاناہے اور اس سلسلے میں نیکٹا اور وزارت داخلہ کے مابین معاملات تقریباً طے پا چکے ہیں اور اس کی منظوری وزیر اعظم پاکستان میاں نواز شریف سے لی جائے گی جس کے بعد چاروں صوبوں گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر میں نیکٹا کے صوبائی ادارے قائم ہونگے جن کے سربراہ صوبے کے وزرائے اعلیٰ اور آزاد کشمیر کے وزیر اعظم ہونگے ذیلی کاؤنٹر ٹیرارزم اتھارٹی میں صوبے کے وزیر داخلہ وزیر قانون چیف سیکرٹری سیکرٹری داخلہ آئی جی پولیس اینٹلی جنس اداروں کے صوبائی سربراہان اور دیگر حکام شامل ہونگے جبکہ نیکٹا میں انٹیلی جنس ونگ بھی فعال کیا جائے گا ۔

07-02-2015 :تاریخ اشاعت