آلودہ خون کی خرید وفروخت کرنے والے موت کے سوداگروں سے کوئی رعایت نہیں برتی جائے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل فروری

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-03
تاریخ اشاعت: 2015-02-03
تاریخ اشاعت: 2015-02-03
تاریخ اشاعت: 2015-02-03
تاریخ اشاعت: 2015-02-03
تاریخ اشاعت: 2015-02-03
تاریخ اشاعت: 2015-02-03
تاریخ اشاعت: 2015-02-03
تاریخ اشاعت: 2015-02-03
تاریخ اشاعت: 2015-02-03
پچھلی خبریں -

لاہور

تلاش کیجئے

آلودہ خون کی خرید وفروخت کرنے والے موت کے سوداگروں سے کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی ، خواجہ عمران نذیر، قانون کے تحت اس جرم کے مرتکب عناصر کو تین سال قید اور پندرہ ہزار روپے جرمانہ کی سزائیں دی جا سکتی ہیں، پارلیمانی سیکرٹری صحت پنجاب

لاہور( اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔3فروری۔2015ء)پنجاب کے پارلیمانی سیکرٹری صحت خواجہ عمران نذیر نے کہا ہے کہ آلودہ خون کی خرید وفروخت کرنے والے موت کے سوداگروں سے کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی - انہو ں نے کہا کہ قانون کے تحت اس جرم کے مرتکب عناصر کو تین سال قید اور پندرہ ہزار روپے جرمانہ کی سزائیں دی جا سکتی ہیں-ایڈز , ہیپا ٹائٹس اور دیگر مہلک جان لیوا بیماریوں کا وائرس آلودہ خون کے ذریعے صحت مند انسانوں میں منتقل ہو رہا ہے - اس گھناؤنے دھندے میں ملوث انسانی زندگیوں سے کھیلنے والے عناصر قرار واقعی سزا کے مستحق ہیں، انہو ں نے یہ بات ہولی فیملی ہسپتال راولپنڈی میں بلڈ ٹرانسفیوژن انسپکٹرز کی ایک روزہ ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کہی - اس موقع پر سیکرٹری پنجاب بلڈ ٹرانسفیوژن اتھارٹی ڈاکٹر جعفر سلیم اور میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ہولی فیملی ہسپتال بلڈ ٹرانسفیوژن آفیسر راولپنڈی ڈاکٹر فیصل اور دیگر اداروں کے بلڈ ٹرانسفیوژن افسران موجود تھے ،خواجہ عمران نذیر نے کہا کہ پنجاب بلڈ ٹرانسفیوژن اتھارٹی کو دوبارہ فعال بنا کر بلڈ ٹرانسفیوژن انسپکٹرز اور اس شعبے سے منسلک ڈاکٹروں او رطبی عملے کی تربیت کا ہمہ گیر پروگرام شروع کر دیا گیا ہے جس کا مقصد مریضوں کو جراثیم سے پاک صاف ستھرے خون کی فراہمی یقینی بنانا ہے - انہو ں نے کہا کہ وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف کی ہدایات پر صحت کے شعبے میں بنیادی سہولیات عام کرنے کے ساتھ ساتھ مہلک امراض کی روک تھام اور آلودہ خون کی خرید و فروخت

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

03-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان