جنوبی وزیرستان ،پاک فوج کی زیرنگرانی تربیت حاصل کرنے والے 26اہلکاروں کو لائس نائیک ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر فروری

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-02
تاریخ اشاعت: 2015-02-02
تاریخ اشاعت: 2015-02-02
تاریخ اشاعت: 2015-02-02
تاریخ اشاعت: 2015-02-02
تاریخ اشاعت: 2015-02-02
تاریخ اشاعت: 2015-02-02
تاریخ اشاعت: 2015-02-02
تاریخ اشاعت: 2015-02-02
تاریخ اشاعت: 2015-02-02
تاریخ اشاعت: 2015-02-02
پچھلی خبریں - مزید خبریں

تلاش کیجئے

جنوبی وزیرستان ،پاک فوج کی زیرنگرانی تربیت حاصل کرنے والے 26اہلکاروں کو لائس نائیک بنادیا گیا،26اہلکاروں کو سٹارلگانے کیلئے پولیٹیکل کمپاونڈ میں تقریب کا انعقاد کیا گیا

جنوبی وزیرستان (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔2فروری۔2015ء )جنوبی وزیرستان میں پاک فوج کی زیرنگرانی تربیت حاصل کرنے والے 26اہکاروں کو سپاہی سے پروموٹ کرکے لائس نائک بنادئے گئے۔پروموٹ ہونے والے 26اہلکاروں کو سٹارلگانے کے لئے جنوبی وزیرستان کے پولیٹیکل کمپاونڈ میں ایک تقریب منعقد ہوئی۔تقریب میں جنوبی وزیرستان کے پولیٹیکل ایجنٹ اسلام زیب نے ترقی پانے والے اہلکاروں کے بازوں پر سٹار لگادئے ۔پروموٹ ہونے والے ہلکاروں نے اپنی سرحدوں کی انچ انچ کی حفاظت کی قسم کھا کر ہر قسم کی قربانی دینے سے دریغ نہ کرنے کا اعلان کردیا۔

زرائع کے مطابق جنوبی وزیرستان میں پاک فوج کی زیرنگرانی میں تربیت حاصل کرنے والے 26اہلکاروں کی ترقی کے سٹار لگانے کے لئے پولیٹیکل کمپاونڈ جنوبی وزیرستان میں ایک تقریب منعقد ہوئی۔تقریب جنوبی وزیرستان کے پولیٹیکل ایجنٹ اسلام زیب نے سپاہی سے پروموٹ ہوکر لائس نائک کی ترقی دینے والے اہلکاروں کے بازوں پر سٹار لگادئے ۔اس موقع جنوبی وزیرستان کے پولیٹیکل ایجنٹ اسلام زیب ، ایڈیشنل پولیٹیکل ایجنٹ فہیم افریدی ،اے پی اے لدھا عبدالناصر خان،اے پی اونواب خان صافی ،پی این ٹی رحمان زادہ محسود،پی این ٹی اللہ نور ،پی این ٹی ظفر خان محسود ،پی ایم فضل الرحمن کے علاوہ لیویز فورس کے صوبیدار میجر سعیداللہ برکی کے علاوہ لیویز فورس کے اہلکاروں نے کثیرتعداد میں شرکت کی۔

پولیٹیکل ایجنٹ اسلام زیب نے سپاہی سے پروموٹ ہوکر لائس نائک بننے والے 26اہلکاروں کے بازوں پر ترقی کے سٹار لگادئے ۔بعد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پولیٹیکل ایجنٹ اسلام زیب نے ترقی پانے والے اہلکاروں کو ان کی ترقی پر

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

02-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان