ترقی پذیر ممالک کاایک بڑامسئلہ کرپشن ہے‘ چیئرمین نیب،خوردبرد‘ اقرباء پروری ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار فروری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-02-01
تاریخ اشاعت: 2015-02-01
تاریخ اشاعت: 2015-02-01
تاریخ اشاعت: 2015-02-01
تاریخ اشاعت: 2015-02-01
تاریخ اشاعت: 2015-02-01
تاریخ اشاعت: 2015-02-01
تاریخ اشاعت: 2015-02-01
تاریخ اشاعت: 2015-02-01
تاریخ اشاعت: 2015-02-01
تاریخ اشاعت: 2015-02-01
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 20/01/2017 - 09:09:59 وقت اشاعت: 19/01/2017 - 11:05:05 وقت اشاعت: 19/01/2017 - 11:05:06 وقت اشاعت: 19/01/2017 - 11:05:09 وقت اشاعت: 19/01/2017 - 11:05:16 وقت اشاعت: 19/01/2017 - 11:11:11 اسلام آباد کی مزید خبریں

تلاش کیجئے

ترقی پذیر ممالک کاایک بڑامسئلہ کرپشن ہے‘ چیئرمین نیب،خوردبرد‘ اقرباء پروری اور اختیارات کے ناجائز استعمال سے سماجی و اقتصادی مسائل کی راہ ہموار ہوتی ہے‘ کرپشن کیخلاف اٹھ کھڑا ہونے کیلئے حوصلہ افزائی کی ضرورت ہے، بیان

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔1فروری۔2015ء) قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین قمر زمان چوہدری نے کہا ہے کہ ترقی پذیر ممالک کے بڑے مسائل میں سے ایک کرپشن ہے‘ رشوت ستانی‘ اقرباء پروری‘ خوردبرد اور اختیارات کا ناجائز استعمال کرپشن کی مختلف صورتیں ہیں جن سے سماجی و اقتصادی مسائل پیدا ہوتے ہیں اسلئے ضرورت اس امر کی ہے کہ عوام کی کرپشن کیخلاف اٹھ کھڑے ہونے کی حوصلہ افزائی کی جائے۔

ہفتہ کو جاری ہونے والے ایک بیان میں چیئرمین نیب نے کہا کہ کرپشن کیخلاف اقوام متحدہ کے کنونشن کے تحت عوام کوبیدار کرنے کے بارے میں قانون سازی پاکستان کی ذمہ داری ہے اور میڈیا کے اس دور میں وسل بلوئنگ ایکٹ ملک کی ایک ناگزیر ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ وسل بلوئنگ کرپشن روکنے کے لئے ایک پیشگی انتباہ کا نظام ہے جس کے تحت بروقت اقدام کے ذریعے کرپشن کو ابتدائی مرحلے میں روکا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مذکورہ ایکٹ سے ایمانداری اور مکمل عزم کی بھی حوصلہ افزائی ہوتی ہے۔

چیئرمین نیب نے کہا کہ وسل بلوئر ایکٹ کے تحت اس امر کو یقینی بنایا جائے گا کہ عوامی مفاد کے معاملات سامنے آنے پر ان کی مناسب تحقیق اور اس کے مطابق اقدام کیا جائے۔اس سے شفافیت ،اچھی ساکھ اور احتساب

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

01-02-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان