نوازشریف عمران کی مرضی کا کبھی جوڈیشنل کمیشن نہیں بنائیں گے ، شیخ رشید،فوجی عدالتوں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ جنوری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-31
تاریخ اشاعت: 2015-01-31
تاریخ اشاعت: 2015-01-31
تاریخ اشاعت: 2015-01-31
تاریخ اشاعت: 2015-01-31
تاریخ اشاعت: 2015-01-31
تاریخ اشاعت: 2015-01-31
تاریخ اشاعت: 2015-01-31
تاریخ اشاعت: 2015-01-31
تاریخ اشاعت: 2015-01-31
تاریخ اشاعت: 2015-01-31
پچھلی خبریں - مزید خبریں

تلاش کیجئے

نوازشریف عمران کی مرضی کا کبھی جوڈیشنل کمیشن نہیں بنائیں گے ، شیخ رشید،فوجی عدالتوں کے کے خلاف فیصلہ آیا یا سپریم کورٹ کو چیلنج کا حق مل گیا تو فوجی عدالتوں کا مقصد ختم ہو جائے گا،افغانستان سے اس وقت پاکستان کے بہت بہتر تعلقات ہیں، جس ملک کا فل ٹائم وزیر خارجہ نہ ہو وہاں کے فوجی سربراہ کو یہ کام کرنا پڑتا ہے، ہندوستان پاکستان کی سرحدوں پرکبھی بھی نہیں چھیڑے گا وہ پاکستان کو اندرونی طور پر کمزور کرے گا،جدہ میں پاکستانی روانگی سے قبل ظہرانے میں گفتگو

جدہ(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔31جنوری۔2015ء) عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشیداحمدنے کہاہے کہ نوازشریف عمران کی مرضی کا کبھی جوڈیشنل کمیشن نہیں بنائیں گے ، فوجی عدالتوں کے کے خلاف فیصلہ آیا یا سپریم کورٹ کو چیلنج کا حق مل گیا تو فوجی عدالتوں کا مقصد ختم ہو جائے گا،افغانستان سے اس وقت پاکستان کے بہت بہتر تعلقات ہیں، جس ملک کا فل ٹائم وزیر خارجہ نہ ہو وہاں کے فوجی سربراہ کو یہ کام کرنا پڑتا ہے، ہندوستان پاکستان کی سرحدوں پرکبھی بھی نہیں چھیڑے گا وہ پاکستان کو اندرونی طور پر کمزور کرے گا۔

ان خیالات کا اظہارانہوں نے جدہ میں پاکستان روانگی سے قبل ایک ظہرانے سے گفتگومیں کیا۔ انہوں نے کہا اگر سپریم کورٹ سے فوجی عدالتوں کے خلاف فیصلہ آیا یا سپریم کورٹ میں ان فیصلوں کو چیلنج کرنے کا حق دے دیا گیا تو فوجی عدالتوں کا مقصد ختم ہوجائے گااور مجھے خدشہ ہے کہ دونوں میں سے ایک کام ہو جائے گا جس کی وجہ سے ایک نیا بحران پیدا ہو جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت افغانستان سے ہمارے بہتر تعلقات ہیں مسئلہ ہندوستان کا ہے۔

جتنے اچھے تعلقات ہمارے اشرف غنی سے ہیں اس سے پہلے کبھی نہیں رہے۔شیخ رشید نے کہا کہ ہندوستان پاکستان کی سرحدوں پرکبھی بھی نہیں چھیڑے گا وہ پاکستان کو اندرسے ختم کرے گا۔ ہندوستان پاکستان کے ساتھ اس وقت کنوینشنل وار لڑنے کی پوزیشن میں نہیں ہے۔ ہندوستان پاکستان کے ساتھ جنگ کا متحمل نہیں ہو

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

31-01-2015 :تاریخ اشاعت