بھارت سلامتی کونسل کا مستقل رکن بننے کا اہل نہیں،پاکستان،مسئلہ کشمیر پر اقوام ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جنوری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-30
تاریخ اشاعت: 2015-01-30
تاریخ اشاعت: 2015-01-30
تاریخ اشاعت: 2015-01-30
تاریخ اشاعت: 2015-01-30
تاریخ اشاعت: 2015-01-30
تاریخ اشاعت: 2015-01-30
تاریخ اشاعت: 2015-01-30
تاریخ اشاعت: 2015-01-30
تاریخ اشاعت: 2015-01-30
تاریخ اشاعت: 2015-01-30
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

تلاش کیجئے

بھارت سلامتی کونسل کا مستقل رکن بننے کا اہل نہیں،پاکستان،مسئلہ کشمیر پر اقوام متحدہ کی قراردادوں کی خلاف ورزی کرنے والا بھارت سلامتی کونسل کا مستقل رکن نہیں بن سکتاہے،عالمی ادارے میں جامع اصلاحات ضروری ہیں ، مستقل ارکان کی تعداد میں اضافہ نہیں ہونا چاہیے، امریکہ اور بھارت کے روایتی ہتھیاروں کے بارے میں سمجھوتے تشویشناک ہیں، پاکستان علاقے میں کم از کم عسکری صلاحیت رکھتا ہے اور ہم تنازعات کا بات چیت کے ذریعے حل چاہتے ہیں،ترجمان دفتر خارجہ تسنیم اسلم کی ہفتہ وار پریس بریفنگ

اسلام آباد( اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔30جنوری۔2015ء )پاکستان نے کہا ہے کہ بھارت اقوام متحدہ کی کشمیر کے بارے میں قراردادوں سے انحراف کے باعث سلامتی کونسل کا مستقل رکن بننے کا اہل نہیں ، عالمی ادارے میں جامع اصلاحات ضروری ہیں تاہم مستقل ارکان کی تعداد میں اضافہ نہیں ہونا چاہیے ، پاکستان علاقے میں کم از کم عسکری صلاحیت رکھتا ہے اور ہم تنازعات کا بات چیت کے ذریعے حل چاہتے ہیں ، امریکہ اور بھارت کے روایتی ہتھیاروں کے بارے میں سمجھوتے تشویشناک ہیں ۔

ان خیالات کااظہار دفتر خارجہ کی ترجمان تسنیم اسلم نے جمعرات کو صحافیوں کو ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران کیا ۔ صحافیوں کے مختلف سوالوں کے جواب دیتے ہوئے ترجمان نے کہا کہ ایک ایسا ملک کس طرح سلامتی کونسل کا مستقل رکن بن سکتا ہے جو اس ادارے کی قراردادوں کی خلاف ورزی کررہا ہو۔ اقوام متحدہ کے تمام ارکان ممالک اصلاحات چاہتے ہیں لیکن یہ اصلاحات جامع انداز میں ہونی چاہیے اور تمام ممالک کی خواہشات اہم ہیں ۔

ترجمان نے کہا کہ یہ ادارہ دنیا میں امن کیلئے قائم کیاگیا تھا اور اس کے قیام کے وقت مستقل ارکان کی تعداد پانچ تھی لیکن آج دنیا میں حقائق تبدیل ہوچکے ہیں بھارت کشمیر کے بارے میں اقوام متحدہ کی قراردادوں کی مسلسل خلاف ورزی کررہا ہے تو وہ کس طرح مستقل رکن بن سکتا ہے ۔ ایک سوال کے جواب میں تسنیم اسلم نے کہا کہ چین ایک عالمی طاقت ہے اور اس کا خطے کے استحکام میں اہم کردار ہے ۔ امریکہ اور بھارت کے جوہری سمجھوتے کے بارے میں ترجمان نے کہا کہ پاکستان

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

30-01-2015 :تاریخ اشاعت