فوٹو گرافی گناہ، بالخصوص خواتین کیلئے شرمناک عمل ہے، انڈونیشین عالم
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جنوری

مزید بین الاقوامی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
پچھلی خبریں -

تلاش کیجئے

فوٹو گرافی گناہ، بالخصوص خواتین کیلئے شرمناک عمل ہے، انڈونیشین عالم

جکارتہ(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔29جنوری۔2015ء) انڈونیشیا کے عالم نے فتویٰ جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ فوٹو گرافی گناہ کاکام ہے اور بالخصوص خواتین کے لیے تو یہ گناہ اور شرمناک عمل ہے۔انڈونیشین عالم نے ٹوئٹر پر کہا کہ جو لوگ موبائلز کے ذریعے سیلفیز لیتے ہیں وہ غرورو تکبر اور نمود ونمائش کے مرتکب ہوتے ہیں اس لیے یہ ایک گناہ کا فعل ہے۔ آج کے اس دور میں کچھ مسلمان خواتین شرم و حیا ایک طرف رکھ کر سلیفیزکرتی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ سیلفیز کرنے والے اور بالخصوص خواتین اس عمل کو اس لیے اختیار کرتی ہیں تاکہ اسے فیس بک پر لگایا جائے تو کیا وہ اس سے اپنی نمائش نہیں کرتیں اور اس طرح کا کوئی بھی عمل اسلام کی سوچ اور فکر کے خلاف ہے لہذا یہ لوگ اس عمل سے بدترین گناہ میں ملوث ہوجاتے ہیں۔

29-01-2015 :تاریخ اشاعت