طالبان کیخلاف کارروائی میں تاخیر کے ذمہ دار جنرل کیانی ہیں‘ پرویز مشرف،جنرل کیانی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جنوری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
تاریخ اشاعت: 2015-01-29
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

تلاش کیجئے

طالبان کیخلاف کارروائی میں تاخیر کے ذمہ دار جنرل کیانی ہیں‘ پرویز مشرف،جنرل کیانی کی ہچکچاہٹ کے باعث ملکی سکیورٹی کو درپیش چیلنجز ناقابل تسخیر بن چکے ہیں‘ موجودہ حکومت ناکام ہے‘ میرے خلاف عدالتی ٹرائل انتقامی کارروائی کا نتیجہ ہے‘ سابق صدر کا انٹرویو

کراچی‘ اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔29جنوری۔2015ء) سابق آرمی چیف جنرل (ر) پرویز مشرف نے الزام عائد کیا ہے کہ ان کے سابق جانشین جنرل (ر) اشفاق پرویز کیانی طالبان کیخلاف آپریشن میں تاخیر کے ذمہ دار ہیں جس کی وجہ سے آج ملک میں سکیورٹی چیلنجز ناقابل تسخیر بن چکے ہیں‘ آرمی چیف جب یہ دیکھے کہ حکومت غیر فعال ہوچکی ہے تو اسے اپنا کردار ادا کرنا چاہئے۔ اپنے ایک انٹرویو میں سابق آرمی چیف نے اس یقین کا اظہار کیا کہ ملک میں اس وقت سکیورٹی کے چیلنجز جو ناقابل تسخیر بن چکے ہیں اس کی وجہ ان کے جانشین جنرل (ر) اشفاق پرویز کیانی کا جنگجوؤں کیخلاف ایکشن نہ لینا تھا۔

مشرف نے کہا کہ جنرل کیانی کی اپنی ہچکچاہٹ تھی‘ فیصلے کمزور نہیں تھے جس کی وجہ سے طالبان کیخلاف آپریشن شروع نہ کیا جاسکا۔ انہوں نے کہا کہ جب آپ دیکھتے ہیں کہ حکومت غیر فعال ہے تو آرمی چیف کی ضرورت ہوتی ہے کہ وہ متحرک کردار ادا کرے جس طرح جنرل راحیل شریف نے ادا کیا تاہم جنرل (ر) کیانی اس سلسلے میں اپنی ریٹائرمنٹ تک محتاط رہے۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ اس سلسلے میں مزید کسی بحث میں نہیں پڑنا چاہتے۔

جب ان سے پوچھا گیا کہ سابق پیپلزپارٹی کی حکومت کے بارے میں اس وقت یہ خیال تھا کہ یہ جانے والی ہے تو اسی دوران اس وقت کے آرمی چیف جنرل کیانی کو توسیع دی گئی تو اس کی کیا وجہ تھی تو اس پر پرویز مشرف نے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

29-01-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان