یوکرائن: ماریوپول میں راکٹ حملوں میں 30 ہلاک ،80 زخمی، حملوں کے ذمہ دار روس نواز ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر جنوری

مزید بین الاقوامی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-26
تاریخ اشاعت: 2015-01-26
تاریخ اشاعت: 2015-01-26
تاریخ اشاعت: 2015-01-26
تاریخ اشاعت: 2015-01-26
تاریخ اشاعت: 2015-01-26
تاریخ اشاعت: 2015-01-26
تاریخ اشاعت: 2015-01-26
پچھلی خبریں -

تلاش کیجئے

یوکرائن: ماریوپول میں راکٹ حملوں میں 30 ہلاک ،80 زخمی، حملوں کے ذمہ دار روس نواز علیحدگی پسند ہیں ،یوکرینی حکومت

کیف(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔26جنوری۔2015ء)یوکرائن کی وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ ملک کے مشرقی حصے میں ماریوپول نامی شہر پر راکٹ حملوں میں کم از کم 30 افراد ہلاک اور 80 زخمی ہوگئے ہیں۔یوکرینی حکومت نے ان حملوں کے لیے روس نواز علیحدگی پسند باغیوں کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے جبکہ باغیوں کا کہنا ہے کہ یہ راکٹ یوکرینی فوج نے داغے تھے۔ماریوپول روس اور روس کا حصہ بننے والے کرائمیا کے علاقے کے درمیان واقع ہے۔

مشرقی یوکرائن میں باغیوں کے مرکزی رہنما نے پہلے تو ماریوپول پر چڑھائی کا اعلان کیا لیکن پھر کہا کہ وہ ’شہر میں داخل نہیں ہوں گے۔یوکرینی حکام کا کہنا ہے کہ راکٹ حملوں میں روس کے حامی باغیوں نے ایک مارکیٹ اور رہائشی عمارت کو نشانہ بنایا۔یورپ میں تحفظ اور تعاون کی تنظیم او ایس سی ای کا بھی کہنا ہے کہ راکٹ باغیوں کے زیرِ اثر علاقے سے پھینکے گئے تھے۔خودساختہ عوامی جمہوریہ دونیستک کے سربراہ الیگزینڈر ذاخارچینکو نے کہا ہے کہ ان کی افواج نے ماریوپول کے نزدیک کسی عسکری کارروائی میں حصہ نہیں لیا۔

تاہم ان کا یہ کہنا تھا کہ یوکرین کی جانب سے باغیوں پر راکٹ حملوں کا الزام عائد کیے جانے کے بعد انھوں نے اپنے فوجیوں کو شہر کے مشرق میں یوکرینی فوج کی پوزیشنوں پر حملہ کرنے کا حکم دیا ہے۔یوکرین کی سکیورٹی سروس نے ایک صوتی پیغام بھی جاری کیا ہے جس میں ان کے بقول باغی ماریوپول کے حملے کا ذکر کر رہے ہیں۔اقوامِ متحدہ کے مطابق اپریل سے لے کر اب تک لڑائی میں 5,000 سے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں اور دس لاکھ سے زیادہ افراد بے گھر ہو چکے ہیں۔

26-01-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان