انتخابات چوری ہوئے یا نہیں ؟چاہتے ہیں جو ڈیشل کمیشن ہاں یا نہ میں فیصلہ کرے،اسحاق ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار جنوری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-25
تاریخ اشاعت: 2015-01-25
تاریخ اشاعت: 2015-01-25
تاریخ اشاعت: 2015-01-25
تاریخ اشاعت: 2015-01-25
تاریخ اشاعت: 2015-01-25
تاریخ اشاعت: 2015-01-25
تاریخ اشاعت: 2015-01-25
تاریخ اشاعت: 2015-01-25
تاریخ اشاعت: 2015-01-25
پچھلی خبریں -

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:36 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:38 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:39 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 10:35:10 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 اسلام آباد کی مزید خبریں

تلاش کیجئے

انتخابات چوری ہوئے یا نہیں ؟چاہتے ہیں جو ڈیشل کمیشن ہاں یا نہ میں فیصلہ کرے،اسحاق ڈار،عمران چاہئیں تو آدھے گھنٹے میں جوڈیشل کمیشن بن سکتا ہے،کمیشن کے فیصلے سے دودھ کا اور پانی کا پانی ہو جائے گا، تین شقوں پر اختلافات تھے،تحریک انصاف کو خط اور ای میل بھیج دی ہیں ،آئین اور قانون کے تحت جوڈیشل کمیشن بنانے کو تیار ہیں ،جہاں تحریک انصاف جیتے وہاں الیکشن ٹھیک اور جہاں (ن) لیگ جیتے وہاں دھاندلی ہوئی ہے،عمران خان کی یہ مثبت سوچ نہیں ہے،وزیر خزانہ کی وفاقی وزیر انوشہ رحمن کے ہمراہ پریس کانفرنس

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔25جنوری۔2015ء)وفاقی وزیر خزانہ سینیٹراسحاق ڈار نے کہا ہے کہ جوڈیشل کمیشن عمران خان کے ان الزامات کی تحقیقات بنایا جارہا ہے جو انہوں نے گزشتہ تین مہینوں میں اپنے جلسوں اور پریس کانفرنسز کے دوران لگائے ہیں ،پورے الیکشن کی چھان بین کرنا ممکن نہیں۔ عمران چاہئیں تو آدھے گھنٹے میں جوڈیشل کمیشن بنانے کو تیار ہیں ،جوڈیشل کمیشن کا فیصلہ آئیگا تو دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا،ہماری کوشش ہے کہ کمیشن جلد از جلد بن جائے ۔

19 اور20 جنوری کو تحریک انصاف کے ساتھ خفیہ مذاکرات ہوئے ہیں،تحریک انصاف کے ساتھ تین سیکشنز پر اختلافات تھے ،پی ٹی آئی کو خط اور امیل بھیج دی ہیں جو انہوں نے تصدیق کر دی ہے ۔ان خیالات کا اظہار وزیر خزانہ نے ہفتہ کے روزوفاقی وزیر انوشہ رحمن کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا ۔وزیر خزانہ نے کہا کہ جوڈیشل کمیشن نے دھاندلی کے بارے میں صرف ہاں یا نا میں جواب دینا ہے اور ہم یہی چاہتے ہیں کہ جوڈیشل کمیشن کا ایک ہی فیصلہ آئے کہ آیا عام انتخابات چوری ہوئے ہیں یا نہیں ۔

انہوں نے کہا کہ حکومت جوڈیشل کمیشن کا معاملہ حل کرنا چاہتی ہے حکومت اس حوالے سے سنجیدہ ہے ہماری پوری کوشش ہے کہ کمیشن جلد از جلد بن جائے ۔انہوں نے کہا کہ شاہ عبد اللہ پاکستان کے ہمدرد اور سچے دوست تھے ۔پاکستان نے ایک روزہ سوگ کا اعلان کیا تھا اس لئے عمران خان کی جدہ میں پریس کانفرنس کا جواب نہیں دیا۔وزیر خزانہ نے کہا کہ جوڈیشل کمیشن بنانے کے حوالے سے سے تحریک انصاف کو خط اور ای میل بھیج دی ہیں ۔

تحریک انصاف کے رہنما اسد عمر نے ای میل ور خط کی تصدیق کر دی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہم نے جوڈیشل کمیشن کے ڈرافٹ میں 2 لفظ تبدیل کئے ہیں ۔آئین اور قانون کے تحت جوڈیشل کمیشن بنانا چاہتے ہیں ۔وزیر خزانہ نے کہا کہ پی ٹی آئی کے ساتھ طے ہوا تھا کہ نئے قانون کے تحت مذاکرات ہوں گے ۔انکوائری کمیشن آرڈیننس کے ذریعے بنانے کا مطالبہ تسلیم کیا ۔ملک کی دیگر سیاسی جماعتوں نے ہمارے مطالبے کو تسلیم کیا ہے ۔

19 اور20 جنوری کو کو تحریک انصا ف کے ساتھ مذاکرات ہوئے تھے 24 کو دوبارہ شروع کئے ۔20 جنوری کو اسد عمر نے ایک تجویز دی جو میں نے قبول کر لی اور یہ بھی تسلیم کیا ہے کہ ایکٹ56 کی بجائے صدارتی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

25-01-2015 :تاریخ اشاعت