پاکستان اور بھارت کے درمیان350کروڑ روپے کا تنازع حل کے قریب پہنچ گیا ، دو نو ں مما ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جنوری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
- مزید خبریں

تلاش کیجئے

پاکستان اور بھارت کے درمیان350کروڑ روپے کا تنازع حل کے قریب پہنچ گیا ، دو نو ں مما لک کے درمیان نظام آف حیدر آباد کی رقم کی اس پیچیدہ قانونی جنگ میں181سال کی تاریخ رکھنے والا برطانوی بینک بھی شامل، رقم کی اب حتمی فیصلہ لندن ہائی کورٹ کریگی

نئی دہلی( اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔23جنوری۔2015ء )بھارتی میڈیا کے مطابق 1948میں لندن میں پاکستانی ہائی کمشنر کے اکاؤنٹ میں نظام آف حیدر آباد کی طرف سے 10 ہزار پونڈ کی منتقلی کا تنازع اب حل ہونے کے قریب ہے۔ حال ہی میں لندن ہائیکورٹ میں اس رقم کے دعوے داروں کے مقدمے کی سماعت ہوئی۔ دونوں ممالک 65برس تک سفارتی بات چیت سے اس رقم کے تنازع کو حل کرنے میں ناکام رہے۔ برطانوی بینک نیٹ ویسٹ لندن میں 67 سال سے 10 ہزار پونڈ اب 3 کروڑ 50لاکھ پونڈ( تین سو پچاس کروڑ روپے) ہو چکے ہیں۔

بھارتی اخبار”احمد آباد مرر، پونے مرر“ کی رپورٹ کے مطابق پاکستان اور بھارت کے درمیان نظام آف حیدر آباد کی رقم کی اس پیچیدہ قانونی جنگ میں181سال کی تاریخ رکھنے والا برطانوی بینک بھی شامل ہے۔ یہ تنازع 67سال قبل اس وقت شروع ہوا جب لندن میں پاکستان کے ہائی کمشنر کے اکاؤنٹ میں10 ہزارپونڈ جمع کرائے گئے ، اس رقم کو بعد میں واپس لینے کا مطالبہ کردیا گیا۔اس رقم کے تنازع کو دونوں ممالک پاکستان اور بھارت کی سفارتی بات چیت نے مزید الجھا دیا۔

رپورٹ کے مطابق20ستمبر1948میں نظام آف حید ر آباد کے وزیر خزانہ نواب معین نواز جنگ نے10 ہزار پونڈ ویسٹ منسٹر بینک لمیٹڈ میں حبیب ابراہیم رحیم تولہ کے اکاؤنٹ میں منتقل کیے، جو اس وقت لندن میں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

23-01-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان