دہشتگردی اور انتہا پسندی ہمارا مشترکہ مسئلہ ہے ، اس کے خاتمے کیلئے پرعزم ہیں ، ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جنوری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
تاریخ اشاعت: 2015-01-23
پچھلی خبریں - مزید خبریں

تلاش کیجئے

دہشتگردی اور انتہا پسندی ہمارا مشترکہ مسئلہ ہے ، اس کے خاتمے کیلئے پرعزم ہیں ، سردار ایاز صادق ، اقوام متحدہ ، یورپی یونین ، او آئی سی اور دیگر عالمی فورمز آزادی اظہار رائے کے نام پر مذہبی عقائد کی توہین کے خاتمے کے لئے قوانین پر عملدرآمد کرائیں ، سپیکر قومی اسمبلی کا استنبول میں اسلامی ممالک کی پارلیمانی کانفرنس سے خطاب اور ترکی سپیکر سے ملاقات میں اظہار خیال

استنبول( اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔23جنوری۔2015ء ) سپیکرقومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے کہا ہے کہ دہشتگردی اور انتہا پسندی ہمارا مشترکہ مسئلہ ہے اس کے خاتمے کیلئے پرعزم ہیں ، اقوام متحدہ ، یورپی یونین ، اسلامی ممالک کی تنظیم او آئی سی اور دیگر عالمی فورمز آزادی اظہار رائے کے نام پر مذہبی عقائد کی توہین کے خاتمے کیلئے مجوزہ قوانین پر سختی سے عملدرآمد کرائیں ، ترک سپیکر سے ملاقات کے دوران دونوں برادر اسلامی ممالک پارلیمنٹرین کے درمیان مکالمے میں اضافہ اور قانون سازی کے تجربے میں شراکت پر اتفاق کیا گیا ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ترکی کے شہر استنبول میں میں جاری اسلامی ممالک کی پارلیمانی کانفرنس کے اجلاس سے خطاب اور ترکی کی قومی اسمبلی کے سپیکر سمیل سیکیک سے ملاقات کے دوران کیا ۔ انہوں نے کہا کہ فرانسیسی اور دیگر رسائل و جرائد میں گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کے باعث عالم اسلام میں شدید غم وغصہ پایا جاتا ہے انہوں نے مذہبی عقائد کی توہین خصوصاً نبی کریم ﷺ کی شان میں گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اسلام امن کا دین ہے اور مسلمان تمام انبیاء کرام مقدس کتابوں اور تمام مذاہب کا احترام کرتے ہیں اور توقع رکھتے ہیں کہ دیگر مذاہب کے ماننے والے بھی ان کے لئے اسی قسم کے احساسات رکھیں ۔

انہوں نے عالمی برادری پرزور دیا کہ وہ دنیا کو امن کا گہوارہ بنانے کے لیے اس قسم کی نفرت انگیز سرگرمیوں جن سے عالم اسلام کے جذبات مشتعل ہوں کو روکنے کیلئے اپنا کردار ادا کرے ۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کی سرگرمیاں اقوام متحدہ کے شہری اور سیاسی حقوق کے عالمی کنونشن کے آرٹیکل 20 اور یورپی یونین انسانی حقوق کے کنونشن کے آرٹیکل 10 کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے سردار ایاز صادق نے اقوام متحدہ ، یورپی یونین ، اسلامی ممالک کی تنظیم او آئی سی اور دیگر اہم امور فورمز پر زور دیا کہ وہ اس قسم کے توہین آمیز طرز عمل کو روکنے کیلئے عملی اقدامات اٹھائیں ۔

سپیکر قومی اسمبلی نے پاکستان میں سولہ دسمبر 2014ء کو آرمی پبلک سکول پشاور کے واقعہ جس میں کچھ نفرت انگیز ذہنیت کے مالک شرپسند عناصر نے 143 افراد جن میں معصوم طلباء ان کے غیر مسلح اساتذہ اور عملے کے دیگر افراد شامل تھے کو شہید کیا گیا تھا کا خصوصی ذکر کیا انہوں نے کہا کہ پاکستان نے ایک دھائی سے دہشتگردی اور انتہا پسندی کی لعنت

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

23-01-2015 :تاریخ اشاعت