چارسدہ ،متنازعہ دارالعلوم پر فائرنگ ،ایک شخص جاں بحق،مہتمم دوساتھیوں سمیت گرفتار،عوام ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جنوری

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
- مزید خبریں

چار سدہ

تلاش کیجئے

چارسدہ ،متنازعہ دارالعلوم پر فائرنگ ،ایک شخص جاں بحق،مہتمم دوساتھیوں سمیت گرفتار،عوام کا نعش کو سٹرک پر رکھ کر زبردست احتجاجی مظاہرہ اور مشتعل مظاہرین نے متنازعہ دارالعلوم کی دیواروں کو مسمار اور کھڑکیاں اور فرنیچر کو آگ لگادی

چارسدہ (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔22جنوری۔2015ء) ترنگزئی کی قبرستان میں متنازعہ درالعلوم پر فائرنگ کے نتیجے میں ایک شخص جاں بحق،درالعلوم مہتمم دوساتھیوں سمیت گرفتار، واقع کیخلاف ترنگزئی کے عوام نے نعش کو سٹرک پر رکھ کر زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا اور مشتعل مظاہرین نے متنازعہ درالعلوم کی دیواروں کو مسمار اور اس میں موجود کھڑکیاں اور فرنیچر کو آگ لگادی جبکہ قریبی متنازعہ فش ہٹ کو بھی جلا دیا گیا علاقے میں کشیدگی کے پیش نظر ڈی پی او چارسدہ سمیت پولیس کی بھاری نفری اور ضلعی انتظامیہ موقع پر پہنچ کر حالات کو کنٹرول کیا ۔

مدعی صالح محمد ولد یار محمد سکنہ ترنگزئی خٹ کورونہ کے مطابق ترنگزئی میں گزشتہ روز متنازعہ درالعلوم کے قریب ایک میت کی تدفین کی اجازت مہتمم درالعلوم کی طرف سے نہ د ینے پر اہل علاقہ مشتعل ہوکر بدھ کے روز صبح کے وقت روڈ بلاک کر کے احتجاجی مظاہرہ کیا اس دوران ہمارے اور پیر اشفاق کے درمیان میتوں کو قبرستان میں نہ دفنانے پر تکرار ہوئی اس دوران پیر اشفاق نے چند کسان کے ہمراہ فائرنگ شروع کی جس کے نتیجے میں میرا بھائی خیال محمد ولد یار محمد سکنہ خٹ کورونہ ترنگزئی گولی لگنے سے جان بحق ہوگیا بعد ازاں میر عالم اور محمد علی کی قیادت میں اہل علاقہ نے نعش کو سڑک پر رکھ کر احتجاجا روڈ بلاک کر کے مظاہرہ کیا۔

انہوں نے موقف اختیار کرتے ہوئے کہا کہ یہ قبرستان اہلیان ترنگزئی کا پرانا قبرستان ہے جس میں پیر اشفاق

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

22-01-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان