حکومت نے 22 ویں آئینی ترمیم کے ذریعے مذہبی جماعتوں کے تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جنوری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
تاریخ اشاعت: 2015-01-22
پچھلی خبریں - مزید خبریں

ساہیوال

تلاش کیجئے

حکومت نے 22 ویں آئینی ترمیم کے ذریعے مذہبی جماعتوں کے تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے،فضل الرحمن ، تمام مذہبی جماعتوں میں ہم آہنگی پائی جاتی ہے، مذہبی جماعتوں سے اختلافات پیدا کرنے کیلئے ڈس انفارمیشن مخصوص ٹولہ پھیلا رہا ہے ،متفقہ لائحہ عمل طے کرنے کے معاملات پر بات ہوئی ہے اور انہوں نے مذہبی جماعتوں کی کانفرنس میں شرکت کے لئے آمادگی ظاہر کی ہے، بائیس جنوری کو ایوان اقبال لاہور میں مذہبی جماعتوں کے کنونشن میں متفقہ لائحہ عمل طے کرلیا جائے گا،ضلع ساہیوال کے کارکنوں سے خطاب

ساہیوال (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔22جنوری۔2015ء) جمعیت علمائے اسلام پاکستان (ف) کے امیر مولانا فضل الرحمن نے انکشاف کیا کہ حکومت نے 22 ویں آئینی ترمیم کے ذریعے مذہبی جماعتوں کے تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے اس سلسلے میں تمام مذہبی جماعتوں میں ہم آہنگی پائی جاتی ہے۔ مذہبی جماعتوں سے اختلافات پیدا کرنے کیلئے ڈس انفارمیشن مخصوص ٹولہ پھیلا رہا ہے ۔ متفقہ لائحہ عمل طے کرنے کے معاملات پر بات ہوئی ہے اور انہوں نے مذہبی جماعتوں کی کانفرنس میں شرکت کے لئے آمادگی ظاہر کی ہے اور بائیس جنوری کو ایوان اقبال لاہور میں ہونے والی مذہبی جماعتوں کے کنونشن میں متفقہ لائحہ عمل طے کرلیا جائے گا۔

آ جامعہ رشیدیہ ساہیوال میں جمعیت علمائے اسلام ضلع ساہیوال کے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اگر مذہبی جماعتوں کے متفقہ لائحہ عمل پر عمل درآمد حکومت نے نہ کیا تو پھر تمام مذہبی جماعتیں ایک پلیٹ فارم سے تحریک

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

22-01-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان