اگر فلسطینیوں نے اسرائیل کے خلاف انٹرنیشنل کریمنل کورٹ میں مقدمہ دائر کرنے کی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ جنوری

مزید بین الاقوامی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
-

تلاش کیجئے

اگر فلسطینیوں نے اسرائیل کے خلاف انٹرنیشنل کریمنل کورٹ میں مقدمہ دائر کرنے کی کوشش کی تو انہیں امریکی امداد کے کروڑوں ڈالرز سے محروم کر دیا جائیگا،امریکی ری پبلکن سینیٹر لنڈسے گراہم

مقبوضہ یروشلم(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔21جنوری۔2015ء)امریکا کے ری پبلکن سینیٹر لنڈسے گراہم نے کہا ہے اگر فلسطینیوں نے اسرائیل کے خلاف انٹرنیشنل کریمنل کورٹ میں مقدمہ دائر کرنے کی کوشش کی تو انہیں امریکی امداد کے کروڑوں ڈالرز سے محروم کر دیا جائے گا۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق لنڈسے گراہم امریکی سینیٹرز کے سات رکنی وفد کے ساتھ ان دنوں مشرق وسطی کے دورے پر ہیں۔ ان کے اس دورے میں اسرائیل کے علاوہ سعودی عرب اور قطر بھی شامل ہیں۔

انہوں نے صاف صاف کہا کہ امریکا آئی سی سی سے رجوع کرنے کی صورت فلسطینیوں کی امداد کم کر دے گا۔مقبوضہ یروشلم میں ایک نیوز کانفرنس کے دوران انہوں نے کہا کہ اسرائیل کے خلاف آئی سی سی رجوع ایک دھوکے پر مبنی جارحیت ہے، اس لیے اس پر امریکی ناراضگی کے اظہار کے لیے ہم بھرپور انداز اختیار کریں گے۔ریپبلکن سینیٹر کے مطابق امریکی قانون میں یہ پہلے سے موجود ہے کہ اگر کوئی آئی سی سی کے سامنے مقدمہ لے کر جائے گا تو اس کی امدادروکی جا سکتی ہے۔

واضح رہے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

21-01-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان