پاکستان روایتی دوست ملک ہے کسی بھی مشکل میں تنہا نہیں چھوڑیں گے‘ چین،کشمیر اور ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ جنوری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
تاریخ اشاعت: 2015-01-21
پچھلی خبریں - مزید خبریں

تلاش کیجئے

پاکستان روایتی دوست ملک ہے کسی بھی مشکل میں تنہا نہیں چھوڑیں گے‘ چین،کشمیر اور ارونا چل پردیش پر ہماری پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی‘ترجمان وزارت خارجہ کی صحافیوں سے گفتگو

بیجنگ(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔21جنوری۔2015ء)چین نے کہا ہے کہ پاکستان روایتی دوست ملک ہے اور کسی بھی مشکل وقت میں اسے تنہا نہیں چھوڑیں گے۔ کشمیر اور اروناچل بارے چینی موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئیگی۔ بھارتی میڈیا کے مطابق چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے صحافیوں کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ چین پاکستان اور بھارت کے درمیان حالات کو بہتر بنانے کیلئے اپنی خدمات پیش کرنے کو تیار ہے لیکن اس سلسلے میں یکطرفہ طور پر کچھ نہیں کیا جا سکتا ہے۔

تاہم انہوں نے کہا کہ ہم اس بات کو یقینی بنانے کی ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں کہ خطے مین پر امن امحول قائم ہو جائے گا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ دونوں ممالک کے درمیان سرحدوں پر کشیدگی چھائی ہوئی ہے اور گولہ باری بھی ہوتی رہی ہے لہٰذا اس صورتحال میں دونوں ممالک کو احتیاط سے کام لینا ہو گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ چینی حکومت نے ہر بار بھارت اور پاکستان کے لیڈران کو یہ بات باور کرائی ہے کہ جنگ کے بجائے امن مذاکرات کو جاری رکھا جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ چین خطے میں ایک مضبوط کردار ادا کرنے کی کوشش کر رہا ہے اور اس سلسلے میں حالات کو بہتر بنانے کیلئے ہمیں یکطرفہ طور پر سوچ کا مظاہرہ کرنے سے پرہیز کرنا ہو گا۔ تاہم چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے مزید کہا کہ برصغیر میں اگر امن کے بارے میں سوچنا ہے تو اس کیلئے لازمی ہے کہ ہم کشمیر مسئلہ کو ایڈریس کریں اور اس کیلئے دونوں ممالک ہندوپاک کو آپس میں بات کرنی ہو گی۔ انہون نے کہا کہ کشمیر میں ٹھوس اور نتیجہ خیز مذاکرات کا چین حامی ہے اور اس سلسلے میں دونوں ممالک کو مدد دینے کیلئے تیار ہے۔

چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے مزید بتایا کہ حالات کو ڈگر پر رکھنے کیلئے دونوں ممالک کو سرحدوں پر خاموشی اختیار کرنی ہو گی اور اس ضمن میں دونوں ممالک کو فوری طور پر مسئلہ کشمیر پر بڑی پیش رفت کرنی ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ چین کا کشمیر پو موقف اٹل ہے اور میں کوئی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

21-01-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان