گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر میں بھی فوجی عدالتیں قائم کرنے کی منظوری ،قومی لائحہ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ جنوری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-14
تاریخ اشاعت: 2015-01-14
تاریخ اشاعت: 2015-01-14
تاریخ اشاعت: 2015-01-14
تاریخ اشاعت: 2015-01-14
تاریخ اشاعت: 2015-01-14
تاریخ اشاعت: 2015-01-14
پچھلی خبریں -

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:14 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:15 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:18 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:19 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:59:54 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:59:56 اسلام آباد کی مزید خبریں

تلاش کیجئے

گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر میں بھی فوجی عدالتیں قائم کرنے کی منظوری ،قومی لائحہ عمل پر پیشرفت اور جلد عملدرآمد کی خود نگرانی کر رہا ہوں اور آخری دہشتگرد کے خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے،نوازشریف، اسلام آباد اور پنجاب میں نفرت انگیز تقاریر اور مواد پر 164مقدمات درج ، 157 گرفتار،نفرت انگیز اور فرقہ وارانہ مواد چھاپنے کے الزام میں 40 پریس سربمہر، لاوٴڈ اسپیکر کے غلط استعمال پر 1994 کیسز رجسٹرڈ ، 1088 افراد گرفتار،اجلاس کو بریفنگ

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔14جنوری۔2015ء )وزیراعظم نے گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر میں بھی فوجی عدالتیں قائم کرنے کی منظوری دے دی ہے اور وزیراعظم محمدنوازشریف نے کہاہے کہ قومی لائحہ عمل پر پیشرفت اور جلد عملدرآمد کی خود نگرانی کر رہا ہوں اور آخری دہشتگرد کے خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔وہ منگل کویہاں قومی ایکشن پلان پر عملدرآمدکے جائزہ اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔اجلاس کو بتایا گیا کہ اسلام آباد اور پنجاب میں نفرت انگیز تقاریر اور مواد پر 164مقدمات درج ۔

157 افراد کو گرفتار کیا گیا جبکہ نفرت انگیز اور فرقہ وارانہ مواد چھاپنے کے الزام میں 40 پرنٹنگ پریس کوسربمہر اور لاوٴڈ اسپیکر کے غلط استعمال پر 1994 کیسز رجسٹرڈ اور 1088 افراد گرفتار کیا گیا۔اجلاس میں وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان، سیکرٹری داخلہ، اٹارنی جنرل اور نیکٹا کے افسران نے شرکت کی۔ اس موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ دہشتگردوں کے خاتمے کے لئے تمام اقدامات کئے جارہے ہیں، معاشرے میں دہشتگردوں کے لئے کوئی جگہ نہیں اور آخری دہشتگرد کے خاتمے تک آرام سے نہیں بیٹھیں گے۔

نیکٹا افسران نے وزیراعظم کو نیشنل ایکشن پلان پرعملدرآمد سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ اسلام آباد اور پنجاب میں نفرت انگیز تقاریر اور مواد پر 164مقدمات درج اور 157 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے جبکہ نفرت انگیز اور فرقہ وارانہ مواد چھاپنے کے الزام میں 40

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

14-01-2015 :تاریخ اشاعت