چیئرمین و ڈپٹی چیئرمین سینٹ‘ لیڈر آف دی ہاؤس مارچ میں ریٹائرڈ ہوجائیں گے،چار ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر جنوری

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
- مزید خبریں

اسلام آباد

تلاش کیجئے

چیئرمین و ڈپٹی چیئرمین سینٹ‘ لیڈر آف دی ہاؤس مارچ میں ریٹائرڈ ہوجائیں گے،چار وفاقی وزراء بھی ریٹائرڈ ‘ ایوان بالا نامور سیاستدانوں سے محروم ہوجائے گا، چوہدری شجاعت کی اننگز مکمل

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔12جنوری۔2015ء) رواں سال مارچ میں 52 سینیٹرز اپنی مدت پوری کرنے کے بعد ریٹائرڈ ہوجائیں گے۔ ریٹائرڈ ہونے والوں میں ملک کے اہم سیاستدان اور وفاقی کابینہ کے اراکین بھی شامل ہیں جبکہ مارچ میں چیئرمین سینٹ ‘ ڈپٹی چیئرمین سینٹ کے علاوہ لیڈر آف دی ہاؤس کے براجمان سینیٹرز بھی ریٹائرڈ ہواجائیں گے۔ چوہدری شجاعت حسین ‘ رحمن ملک‘ افراسیاب خٹک‘ بابر غوری‘ جہانگیر بدر‘ فاروق ایچ نائیک ‘ میر حاصل بزنجو ‘ مولانا غفور حیدری‘ مولا بخش چانڈیو‘ زاہد خان ‘ پرویز رشید ‘ راجہ ظفر الحق‘ سیدہ صغریٰ امام وغیرہ جیسے نامور سیاستدانوں سے ایوان بالا محروم ہوجائے گا۔

مارچ میں چار وفاقی وزیر بھی اپنے عہدوں سے خود بخود ریٹائرڈ ہو جائیں گے۔ سینیٹ سیکرٹریٹ کی مارچ میں ریٹائرڈ ہونے والے سینیٹرز کی لسٹ ویب سائٹ پر جاری کی گئی ہے۔ سینیٹر رحمن ملک ‘ سینیٹر عباس آفریدی‘ ایم کیو ایم کے عبد الحسیب خان‘ اے این پی کے سینیٹر نبی بنگش‘ پختونواہ ملی عوامی پارٹی کے سینیٹر عبدالرؤف ‘ پی پی پی کے عدنان خان‘ اے این پی کے افراسیاب خٹک‘ پیپلزپارٹی کی سینیٹر الماس پرویز‘ اے این پی کے امر جیت ‘ ایم کیو ایم کے بابر غوری‘ ن لیگ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12-01-2015 :تاریخ اشاعت