پاکستان سے دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑنے اور ملک کو ترقی کی راہ پر چلانے کے لیے فوج ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر جنوری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
تاریخ اشاعت: 2015-01-12
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

تلاش کیجئے

پاکستان سے دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑنے اور ملک کو ترقی کی راہ پر چلانے کے لیے فوج کا آئینی کردار چاہتے ہیں‘ پرویز مشرف ،میرے دور میں فوج کا آئینی کردار ادا کرنے کے لیے سکیورٹی کونسل جیسا ادارہ بنایا تھا تا کہ سیاستدانوں اور فوج میں اہم ایشوز پر مکمل ہم آہنگی ہو،ملک کی بقاء اور دہشت گردوں کا قلع قمع کرنے کے لیے حکومت و پاک فوج کی مکمل حمایت کرتے ہیں ‘ سابق صدر کی مرکزی سیکرٹری جنرل ڈاکٹرمحمد امجد سے گفتگو

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔12جنوری۔2015ء) آل پاکستان مسلم لیگ کے چیئرمین و سابق صدر سید پرویز مشرف نے کہا ہے کہ پاکستان سے دہشت گردی کا خاتمہ کرنے اور اسے جڑ سے اکھاڑنے کے لیے اور ملک کو ترقی کی راہ پر چلانے کے لیے فوج کا آئینی کردار چاہتے ہیں۔ میرے دور میں فوج کا آئینی کردار ادا کرنے کے لیے سکیورٹی کونسل جیسا ادارہ بنایا تھا تا کہ سیاستدانوں اور فوج میں اہم ایشوز پر مکمل ہم آہنگی ہواور کسی بھی ملکی اہم ایشو چاہے وہ داخلہ و خارجہ یا سلامتی امور سے متعلقہ ہو اس پر کھل کر بحث کی جا سکے اور اسکا حل نکالا جائے۔

نیشنل سیکورٹی کونسل ہی واحد ادارہ تھا جو حکومتی کارکردگی کو بہتر بنانے میں اہم کردار اداکر سکتاہے۔ دونوں حکومتوں کے فیل ہونے کی بنیادی وجہ ہی نیشنل سیکورٹی کونسل کا غیر فعال ہونا تھا، اگر نیشنل سیکورٹی کونسل فعال ہو تو ملک میں ترقی کی راہ میں حائل ہر قسم کی رکاوٹیں ختم ہو جاتی ہیں اور ملک میں جاری افواہ ساز خبریں دم توڑ جاتی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکزی سیکرٹری جنرل ڈاکٹرمحمد امجد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

آج ملک میں اتفاق و اتحاد کی جتنی ضرورت ہے پہلے کبھی نہ تھی۔ ملک بچانا ہے تو فوج و آئینی کردار ادا کرنا ہوگا تا کہ دہشت گردوں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12-01-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان