افغان طالبان نے وزارتوں کی پیشکش کو مسترد کر دیا ،صدارتی ترجمان کی پیش کش کی تردید ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ جنوری

تلاش کیجئے

افغان طالبان نے وزارتوں کی پیشکش کو مسترد کر دیا ،صدارتی ترجمان کی پیش کش کی تردید

کابل (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔10 جنوری۔2015ء) افغان طالبان نے افغان حکومت کی جانب سے وزارتوں کی پیشکش کو مسترد کر دیا ہے۔طالبان کو حکومت کا حصہ بننے کی پیشکش صدر اشرف غنی نے ملک میں جاری مسلح تصادم کے اختتام کے لیے کی تھی۔تین ماہ قبل صدر کے عہدے پر نافذ ہونے والے اشرف غنی جلد ہی اپنی کابینہ کا اعلان کریں گے۔افغان صدر کے ترجمان نے اس بات کی تردید کی ہے کہ افغان طالبان کو باضابطہ طور پر عہدوں کی پیشکش کی گئی تھی۔

تاہم بی بی سی کے مطابق صدر اشرف غنی کے قریبی رفقا کا کہنا ہے کہ صرف دو جماعتوں سے نہیں بلکہ افغانستان کی تمام جماعتوں کو افغان حکومت کا حصہ بننا چاہیے۔اشرف غنی کو امید تھی کہ وہ تین افراد کو حکومت کا حصہ بنانے میں کامیاب ہو جائیں گے۔ ان میں سے ایک طالبان کے پاکستان میں سابق سفیر ملا ضعیف، جب کہ باقی دو میں سابق طالبان وزیر خارجہ وکیل متوکل اور گلبدین حکمت یار کے قریبی ساتھی غیرت بہیر شامل تھے۔

ان طالبان رہنماوٴں کو جن وزارتوں کی پیشکش کی گئی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10-01-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان