21 ویں ترمیم امتیازی ہے جسکے تحت کچھ دہشت گرد گروہوں کو فوجی عدالتوں سے استثنی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جنوری

مزید اہم خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-09
تاریخ اشاعت: 2015-01-09
تاریخ اشاعت: 2015-01-09
تاریخ اشاعت: 2015-01-09
تاریخ اشاعت: 2015-01-09
تاریخ اشاعت: 2015-01-09
تاریخ اشاعت: 2015-01-09
تاریخ اشاعت: 2015-01-09
پچھلی خبریں -

اسلام آباد

تلاش کیجئے

21 ویں ترمیم امتیازی ہے جسکے تحت کچھ دہشت گرد گروہوں کو فوجی عدالتوں سے استثنی دے دیا گیا ہے ،مولانا فضل الرحمن ،ہر روپ میں دہشت گردی ہو بلا امتیاز کارروائی اور یکساں قانون بنایا جائے،۔کسی دہشت گردکی وکالت نہیں کررہے بلکہ دہشت گردی کا مکمل خاتمہ چاہتے ہیں ، کیا داڑھی اور پگڑی ہٹا کرصولت مرزا اور اجمل پہاڑی نام رکھ کر دہشت گردی جائز ہو جائے گی ؟22 جنوری کو دینی سیاسی جماعتوں کے زیر اہتمام لاہور میں قومی سیمینار کا انعقاد ہوگا،حکومت لچک کا مظاہرہ کرے بصورت دیگر معاملہ ڈی چوک تک پہنچ جائے گا،ہمارے بجائے خورشید شاہ سے پوچھیں یہ حکومت میں کب شامل ہو رہے ہیں ،غیر فعال متحدہ مجلس عمل کے رہنماؤں کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔9 جنوری۔2015ء)جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ 21 ویں ترمیم امتیازی ہے جس کے تحت کچھ دہشت گرد گروہوں کو فوجی عدالتوں سے استثنی دے دیا گیا ہے ۔ہر روپ میں دہشت گردی ہو بلا امتیاز کارروائی اور یکساں قانون بنایا جائے۔کسی دہشت گردکی وکالت نہیں کررہے بلکہ دہشت گردی کا مکمل خاتمہ چاہتے ہیں ۔ کیا داڑھی اور پگڑی ہٹا کرصولت مرزا اور اجمل پہاڑی نام رکھ کر دہشت گردی جائز ہو جائے گی ؟22 جنوری کو دینی سیاسی جماعتوں کے زیر اہتمام لاہور میں قومی سیمینار کا انعقاد ہوگا۔

حکومت لچک کا مظاہرہ کرے بصورت دیگر معاملہ ڈی چوک تک پہنچ جائے گا۔ہمارے بجائے خورشید شاہ سے پوچھیں یہ حکومت میں کب شامل ہو رہے ہیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں جمعرات کے روز غیر فعال متحدہ مجلس عمل کے رہنماؤں کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر مولانا فضل الرحمن کے ہمراہ جے یو آئی پی کے سربراہ صاحبزادہ ابو الخیبر زبیر ،اسلامی تحریک کے سیکرٹری جنرل علامہ عارف حسین واجدی ،پروفیسر ساجد میر ،عبد الجمیل نقشبندی ،حنیف جالندھری ،وفاقی وزیراکرم خان درانی بھی موجود تھے ۔

مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ تمام سیاسی ودینی جماعتیں سانحہ پشاور کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں جبکہ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ دہشت گردوں کے خلاف بلا تفریق کارروائی کی جائے ۔انہوں نے کہا کہ 21 ویں آئینی ترمیم امتیازی ہے جس میں بہت سے دہشت گرد گروہوں کو فوجی عدالتوں سے استثنی دیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مذہب ،رنگ ،علاقیت اور صوبائیت میں دیگر کی بناء پر قتل کرنا بھی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09-01-2015 :تاریخ اشاعت