تھانہ آبپارہ پولیس نے لال مسجد کے خطیب مولانا عبدالعزیز کی گرفتاری کے وارنٹ حاصل ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل جنوری

مزید قومی خبریں

تاریخ اشاعت: 2015-01-06
تاریخ اشاعت: 2015-01-06
تاریخ اشاعت: 2015-01-06
تاریخ اشاعت: 2015-01-06
تاریخ اشاعت: 2015-01-06
تاریخ اشاعت: 2015-01-06
تاریخ اشاعت: 2015-01-06
تاریخ اشاعت: 2015-01-06
تاریخ اشاعت: 2015-01-06
تاریخ اشاعت: 2015-01-06
تاریخ اشاعت: 2015-01-06
- مزید خبریں

اسلام آباد

تلاش کیجئے

تھانہ آبپارہ پولیس نے لال مسجد کے خطیب مولانا عبدالعزیز کی گرفتاری کے وارنٹ حاصل کرلئے ، پولیس نے اپنی مرضی کے مطابق مولانا عبدالعزیز کے بیان قلمبند کر لئے،ضمانتی کا بندوبست کرنے کی ہدایت

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن ۔6 جنوری۔2015ء )تھانہ آبپارہ پولیس نے سول سوسائٹی کے افراد کو دھمکیاں دینے پر لال مسجد کے خطیب مولانا عبدالعزیز کی گرفتاری کے وارنٹ حاصل کر لئے ہیں تاہم پولیس نے اپنی مرضی کے مطابق مولانا عبدالعزیز کے بیان قلمبند کر لئے اور ضمانتی کا بندوبست کرنے کی ہدایت کی ہے جبکہ سول سوسائٹی کے افراد کے خلاف درج مقدمے میں بھی ملزمان کو ضمانتی کا بندوبست کرنے کا کہہ دیا گیاہے اور پولیس چالان تیار کر کے آئندہ چند روز تک عدالت میں جمع کر ا دے گی۔

باوثوق ذرائع کے مطابق سول سوسائٹی کی جانب سے سانحہ پشاور کے سلسلے میں 18 اور 19 دسمبر کو کئے جانے والے احتجاج کے دوران لال مسجد کے خطیب مولانا عبدالعزیز اور ان کے چار گن مین کی طرف سے سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے پر تھانہ آبپارہ پولیس نے دفعہ 506iiت پ کے تحت مقدمہ درج کیا تھا جس پر ڈیوٹی جج ثاقب جواد نے مولانا عبدالعزیز کے وارنٹ گرفتاری جاری کئے تھے ۔انسپکٹر جنرل آف پولیس اسلام آباد طاہر عالم خان نے تھانہ آبپارہ پولیس کے ایس ایچ اوخالد اعوان سے ٹیلی فونک رابطہ کیا اورمولانا عبدالعزیز کی گرفتاری کے متعلق بریفنگ لی جس پر ایس ایچ او نے آئی جی کو بتایاکہ وارنٹ عدالت سے حاصل کر لئے گئے ہیں ،ملزم کی گرفتاری سے نقص امن کا خدشہ ہے البتہ وارنٹ کی تعمیل کرائی جائے گی ۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایس ایچ او نے مولانا عبدالعزیز کو تھانے بلا کر ملاقات کی اور تمام صورتحال سے آگاہ کر کے وارنٹ کی تعمیل کے لئے رضا مند کر لیا ہے ،پولیس نے مولانا عبدالعزیز سے اپنی مرضی کے مطابق بیان قلمبند کر ا کے ضمانتی کا بندوبست کرنے کی ہدایت کردی ہے جبکہ مقدمے کا چالان تیار کر کے آئندہ چند روزتک متعلقہ عدالت میں جمع کر ا دیا جائے گا۔دوسری جانب سول سوسائٹی کے افراد کو بھی ضمانت کا بندوبست کرنے کی ہدایت کر دی گئی بصورت دیگر ان کی گرفتاری عمل میں لائی جائے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

06-01-2015 :تاریخ اشاعت