شاہد خان آفریدی کی شہرت نے انھیں پاکستان کا چہرہ بنا دیا ہے اور اب ہر بل بورڈ یا ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جنوری

کراچی

تلاش کیجئے

شاہد خان آفریدی کی شہرت نے انھیں پاکستان کا چہرہ بنا دیا ہے اور اب ہر بل بورڈ یا ٹی وی کمرشل میں انھیں دیکھا جا سکتا ہے، غیر ملکی خبررساں ادارے کا سروے ،1996 میں سری لنکا کے خلاف نیروبی میں اپنے دوسرے انٹرنیشنل ون ڈے میں 37 گیندوں پر سو رنز بنانے آفریدی پاکستان میں ایک اہم شخصیت بن گئے ہیں۔گزشتہ ہفتے ورلڈ کپ 2015 کے بعد ون ڈے کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے ان کے اعلان سے اب ان کے کروڑوں چاہنے والے اس کشمکش میں مبتلا ہوگئے،لڑکیاں آفریدی کی ایک جھلک دیکھنے کو بے تاب ہوتی ہیں اور بہت سی ان سے شادی کرنے کی بھی خواہش مند ہیں

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارآن لائن۔یکم جنوری ۔2015ء ) اگر فینز کی تعداد ہی کرکٹ میں عظمت کا نشان ہے تو پاکستانی آل راوٴنڈر شاہد خان آفریدی کو ملک کے عظیم ترین کھلاڑیوں میں شمار کیا جا سکتا ہے۔1996 میں سری لنکا کے خلاف نیروبی میں اپنے دوسرے انٹرنیشنل ون ڈے میں 37 گیندوں پر سو رنز بنانے آفریدی پاکستان میں ایک اہم شخصیت بن گئے ہیں۔گزشتہ ہفتے ورلڈ کپ 2015 کے بعد ون ڈے کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے ان کے اعلان سے اب ان کے کروڑوں چاہنے والے اس کشمکش میں مبتلا ہوگئے ہیں کہ آفریدی کے بعد اب وہ کسے دیکھیں گے؟ غیر ملکی رساں ادارے مطابق پاکستان میں کسی کرکٹر کو اتنی پزیرائی نہیں ملی جنتی شاہد آفرید کو ملی ہے۔

آفریدی وہ کھلاڑی ہیں جن کی وجہ سے اسٹیڈیم شائقین سے بھر بھی جاتا تھا اور ان کے نہ ہونے سے اکثر خالی نظر آتا تھا۔ان کو کھیلتے ہوئے دیکھنے کا شوق اتنا شدید ہے کہ جب اپنی سنچریوں کا ورلڈ ریکارڈ بنانے کے کچھ عرصے بعد پشاور میں ایک میچ کے دوران آفریدی زمبابوے کے ایک باوٴلر کی گیند پر آوٴٹ ہوئے تو شائقین چلانے لگے کہ 'آفریدی کو دوبارہ کھیلنے دیا جائے'۔لڑکیاں آفریدی کی ایک جھلک دیکھنے کو بے تاب ہوتی ہیں اور بہت سی ان سے شادی کرنے کی بھی خواہش مند ہیں۔

سال 2004 میں دو خواتین عروسی ملبوسات میں اسٹیڈیم آئیں اور اس شرط پر جانے کے لیے تیار ہوئیں کہ انھیں آفریدی سے روبرو

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

01-01-2015 :تاریخ اشاعت

:متعلقہ عنوان