شہباز قلندر کے مزار کے واقعہ کے بعد افغانستان کے ساتھ باڈر کو سیل کر دیا گیا ،ْمشاہد ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ فروری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 17/02/2017 - 16:26:23 وقت اشاعت: 17/02/2017 - 17:02:13 وقت اشاعت: 17/02/2017 - 17:01:59 وقت اشاعت: 17/02/2017 - 16:55:03 وقت اشاعت: 17/02/2017 - 16:54:55 وقت اشاعت: 17/02/2017 - 16:54:53 وقت اشاعت: 17/02/2017 - 16:54:52 وقت اشاعت: 17/02/2017 - 16:41:42 وقت اشاعت: 17/02/2017 - 16:41:35 وقت اشاعت: 17/02/2017 - 16:41:33 وقت اشاعت: 17/02/2017 - 16:41:29
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

شہباز قلندر کے مزار کے واقعہ کے بعد افغانستان کے ساتھ باڈر کو سیل کر دیا گیا ،ْمشاہد اللہ خان

سارے دہشتگرد افغانستان سے ہی آ رہے ہیں ،ْملا فضل اللہ ،لعل شہباز قلندر کے مزار پر واقع میں ملوث ہیں ،ْ میڈیا سے گفتگو

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 فروری2017ء)سابق وفاقی وزیر سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا ہے کہ شہباز قلندر کے مزار کے واقعہ کے بعد افغانستان کے ساتھ باڈر کو سیل کر دیا گیا ، سارے دہشتگرد افغانستان سے ہی آ رہے ہیں ،ْملا فضل اللہ ،لعل شہباز قلندر کے مزار پر واقع میں ملوث ہیں ۔ جمعہ کو پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ملک میں بڑھتے ہوئے دہشتگردی کے واقعات میں وہ ممالک ملوث ہیں جن کو سی پیک منصوبہ ہضم نہیں ہو رہا ۔

اس منصوبے کی تکمیل سے وہ ممالک خوفزدہ ہیں جو دنیا پر طویل عرصہ سے حکمرانی کر رہے ہیں اوراپنے ہاتھ سے پاور نکلتے دیکھ کر پاکستان کے اندر سی پیک کا راستہ روکنے کیلئے دہشتگردی کروا رہے ہیں۔ پاکستان کو خوشحالی کے راستہ پر چلنے سے روکا جا رہا ہے تاہم ہم اسی راستہ پر ہی چلیں گے چاہے کچھ بھی ہو ۔ انہوں

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

17/02/2017 - 16:54:53 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان