وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کراچی سرکلر ریلوے کی فزیبلٹی کی تیاری کے لئے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 11/01/2017 - 23:03:27 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 23:03:26 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 23:03:24 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 23:03:23 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 23:03:22 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 23:03:21 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 22:58:07 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 22:58:07 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 22:58:07 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 22:58:07 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 22:58:07
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کراچی سرکلر ریلوے کی فزیبلٹی کی تیاری کے لئے 45ملین روپے کی منظوری دی

ْ کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 جنوری2017ء)وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کراچی سرکلر ریلوے کی فزیبلٹی کی تیاری کے لئے 45ملین روپے کی منظوری دی ہے اور اس کے روٹس سے تجاوزات کے خاتمے کا بھی حکم دیا ہے تاکہ منصوبے پر سی پیک کے ذریعے کام کا آغا ز ہو سکے ۔ انہوںنے یہ حکم بدھ کے روز نیو سندھ سیکریٹریٹ میں کے سی آر پر منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے دیا ۔

اجلاس میںصوبائی وزیر ٹرانسپورٹ سید ناصر شاہ ، اے سی ایس (ترقیات) محمد وسیم ، سیکریٹری ٹرانسپورٹ طحہ فاروقی ، سیکریٹری خزانہ حسن نقوی ، ڈی ایس ریلوے نثار میمن و دیگر نے شرکت کی ۔ وزیراعلیٰ سندھ کو بریفنگ دیتے ہوئے صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ ناصر شاہ نے کہاکہ کے سی آر منصوبے کی مجموعی لمبائی 43کلو میٹر ہے جس میں سے 13.43 کلومیٹر ریلوے کی مین لائن پر ہے اور 29.69 کلومیٹر کے سی آر کی لوپ لائن پر ہے ۔

انہوںنے کہاکہ انہوںنے گذشتہ روز کے سی آر کے مکمل روٹ کا دورہ کیا تھا اور انہوں نے روٹ کے ساتھ تجاوزات پائیں ۔ ڈی ایس ریلوے کراچی نثار میمن نے وزیراعلیٰ سندھ کو تجاوزات کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے کہاکہ کے سی آر منصوبے کے لئے مجموعی طور پر 360 ایکڑ رقبہ درکار ہے جس میں سے 260 ایکڑ پاکستان ریلویز کی زمین ہے اور 100ایکڑ مین لائن پر ہے ۔

انہوںنے کہاکہ 67ایکڑ پر تجا وزات ہیں جس میں 47ایکڑ کے سی آر لوپ لائن پر ہے اور 20ایکڑ مین لائن کے ساتھ ہے ۔انہوںنے کہاکہ قبضہ کی گئی زمین پر 4653 گھر تعمیر کئے گئے ہیں اور 2997 دیگر تجاوزات ہیں ۔اس طرح سے کے سی آر کے 20فیصد حصے پر تجا وزات ہیں اس منصوبے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/01/2017 - 23:03:21 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان