اقلتیوں کے حقوق کا تحفظ یقینی بنایا جائے گا اور انھیں معاشرے میں جائز مقام دلانے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 11/01/2017 - 16:13:29 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 16:10:13 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 16:10:10 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 16:09:56 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 16:04:39 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 16:03:03 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 16:00:10 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 15:23:37 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 15:23:29 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 15:23:27 وقت اشاعت: 11/01/2017 - 15:15:26
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اقلتیوں کے حقوق کا تحفظ یقینی بنایا جائے گا اور انھیں معاشرے میں جائز مقام دلانے کے لئے ہر ممکن کوششیں کیں جائیں گی‘ وہ دن دور نہیں جب پاکستان کو بین الاقوامی سطح پر اقلیت دوست ملک کے طور پر جانا جائے گا ‘ قوم کو اندھیروں میں جھونکنے والوں اور ترقی کا راستہ روکنے والوں کو جواب دینا پڑے گا، ہم رکنے والے نہیں ہیں‘ ہم مخلوق کی بہتری‘ خوشحالی اور بے روزگاری کے خاتمے کے لئے کام کرتے جائیں گے، پورے ملک کی موٹر ویز ہمارے ہاتھوں سے بننی ہیں، 2013 سے قبل روز بم دھماکے ہوتے تھے‘اب دہشت گردی قابو میں آرہی ہے‘ پاکستان نے معاشی استحکام حاصل کر لیا ہے جسکا اعتراف دنیا کے معروف ادارے کر رہے ہیں، معاشی اشاریے پہلے سے کئی گنا بہتر ہوگئے‘ شرح نموجو گذشتہ سال4.7 فیصد تھی وہ اس سال 5.5 فیصد ہوجائے گی اور آئندہ دو سال میں 7 فیصد سے بڑھ جائے گی، بابا گرونانک اور گندھارا یونیورسٹی کے قیام کے سلسلے میں ہر ممکن مدد اور تعاون فراہم کریں گے

وزیراعظم محمد نواز شریف کا کٹاس راج کے دورہ کے موقع پرواٹر فلٹریشن پلانٹ کے افتتاح کے بعد اجتماع سے خطاب

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 جنوری2017ء) وزیراعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ اقلتیوں کے حقوق کا تحفظ یقینی بنایا جائے گا اور انھیں معاشرے میں جائز مقام دلانے کے لئے ہر ممکن کوششیں کیں جائیں گی‘ وہ دن دور نہیں جب پاکستان کو بین الاقوامی سطح پر اقلیت دوست ملک کے طور پر جانا جائے گا ‘ قوم کو اندھیروں میں جھونکنے والوں اور ترقی کا راستہ روکنے والوں کو جواب دینا پڑے گا، ہم رکنے والے نہیں ہیں‘ ہم مخلوق کی بہتری‘ خوشحالی اور بے روزگاری کے خاتمے کے لئے کام کرتے جائیں گے، پورے ملک کی موٹر ویز ہمارے ہاتھوں سے بننی ہیں‘ 1999 اور 2013 کے درمیان کی مدت میں کوئی موٹر وے نہیں بنی‘ 2013 سے قبل روز بم دھماکے ہوتے تھے‘ مسلمان مسلمان کا گلا کاٹ رہا تھا‘ اللہ نے ہماری مدد کی اور دہشت گردی بھی قابو میں آرہی ہے‘ پاکستان نے معاشی استحکام حاصل کر لیا ہے جسکا اعتراف دنیا کے معروف ادارے کر رہے ہیں، معاشی اشاریے پہلے سے کئی گنا بہتر ہوگئے‘ شرح نموجو گذشتہ سال4.7 فیصد تھی وہ اس سال 5.5 فیصد ہوجائے گی اور آئندہ دو سال میں 7 فیصد سے بڑھ جائے گی، بابا گرونانک اور گندھارا یونیورسٹی کے قیام کے سلسلے میں ہر ممکن مدد اور تعاون فراہم کریں گے۔

وہ بدھ کو کٹاس راج کے دورہ کے موقع پرواٹر فلٹریشن پلانٹ کے افتتاح کے بعد اجتماع سے خطاب کر رہے تھے۔ وفاقی وزیر برائے مذہبی امور و بین المذاہب ہم آہنگی سردار محمد یوسف ‘چیئرمین متروکہ وقف املاک بورڈ صدیق الفاروق ‘ ایم این اے ڈاکٹر درشن ‘اسفن یار بھنڈرا اور اقلیتی برادریوں کے نمائندے بھی اس موقع پر موجود تھے۔وزیراعظم محمد نواز شریف نے کہا کہ وہ تمام پاکستانیوں کے وزیراعظم ہیں اور یہ انکا مذہبی فریضہ ہے کہ وہ ملک کے ہر شہری کا بلا تفریق خیال رکھیں۔

انہوں نے کہا کہ آثار قدیمہ کے حوالے سے کٹا س راج کو بڑی اہمیت حاصل ہے جو 4 تہذیبوں کا سنگم ہے‘ آج کا اجتماع پوری دنیا کو پیغام دے رہا ہے کہ پاکستان میں بسنے والی اقلیتوںکو برابر کا شہری سمجھا اور مانا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام اقلیتیں پاکستان کے دفاع‘ امن‘ ترقی اور خوشحالی کے لئے ہاتھوں میں ہاتھ ڈال کر کام کررہی ہیں‘ ہم سب پاکستان کی تعمیر میں ہاتھ بٹا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مذہب سب کا اپنا اپنا لیکن انسانیت ہماری مشترکہ اساس ہے‘ میں ذاتی طور پر اقلیتوں کی خوشیوں میں شریک ہوتا ہوں‘ بطور پاکستانی ہماری خوشیاں اور دکھ سانجھے ہیں۔ وزیراعظم محمد نواز شریف نے کہا کہ وہ بابا گرونانک اور گندھارا یونیورسٹی کے قیام کے سلسلے میں ہر ممکن مدد اور تعاون فراہم کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ وہ دن دور نہیں جب پاکستان کو بین الاقوامی سطح پر اقلیت دوست ملک کے طور پر جانا جائے گا ۔

انہوں نے کہا کہ حضور ﷺ نے اقلیتوں کے تحفظ کے کی ضمانت دی تھی‘ ہر مذہب احترام‘ اتحاد اور اتفاق کا درس دیتا ہے‘ غلط سبق کسی کو پڑھانا چاہیے نہ سیکھنا چاہیے۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان میں مختلف مذاہب کے مقدس مقامات موجود ہیں، اس حوالے سے انہوں نے صدیق الفاروق کو واضح تاکید کی کہ غیر ملکی یاتریوں کی میزبانی اور ان کے مذہبی مقامات کے تحفظ‘ تزئین و آرائش اور توسیع کے سلسلے میں کوئی کسر نہ چھوڑی جائے‘ اقلیتوں کی خدمت سے پاکستان مضبوط ہوگا اور اس نیک کام سے اللہ تعالی بھی خوش ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے باقی مدت میںبہت کچھ کرنا ہے کیونکہ ماضی کی حکومتوں نے کچھ نہیں کیا ‘وہ پاکستان کو اندھیروں میں جھونک گئے ‘ 16‘ 16 گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ ہورہی تھی‘ قوم کو اندھیروں میں جھونکنے والوں کو جواب دینا ہوگا اور آج جو ترقی کا راستہ روک رہے ہیں انھیں بھی جواب دینا پڑے گا ‘ ہم انھیں بتا دینا چاہتے ہیں کہ ہم رکنے والے نہیں ہیں‘ ہم مخلوق کی بہتری‘

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/01/2017 - 16:03:03 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان