اسٹیٹ لائف انشورنس کے سالانہ انتظامی اخراجات ساڑھے 6 ارب روپے ، آوٹ پٹ صرف 52 لاکھ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:47:20 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:47:17 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:47:13 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:22:49 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:43:39 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:43:37 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:43:34 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:43:33 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:43:33 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:39:51 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:39:51
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اسٹیٹ لائف انشورنس کے سالانہ انتظامی اخراجات ساڑھے 6 ارب روپے ، آوٹ پٹ صرف 52 لاکھ روپے ہیں ،پبلک اکائونٹس کمیٹی کے اجلاس میں انکشاف

آڈیٹر جنرل آف پاکستان نے ادارے کو سفید ہاتھی قرار دے دیا , بتایا جائے تیس سال سے منافع میں چلنے والے ادارے یکایک خسارے میں کیسے چلے گئے ،کمیٹی کا اسٹیٹ لائف انشورنس اور نیشنل انشورنش کمپنی لمیٹڈ حکام کی بریفنگ پر عدم اطمینان کا اظہار

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 نومبر2016ء) پبلک اکائونٹس کمیٹی کے اجلاس میں انکشاف کیا گیا ہے کہ اسٹیٹ لائف انشورنس کے سالانہ انتظامی اخراجات ساڑھے 6 ارب روپے جبکہ آوٹ پٹ صرف 52 لاکھ روپے ہے ، آڈیٹر جنرل آف پاکستان نے ادارے کو سفید ہاتھی قرار دے دیا،کمیٹی نے اسٹیٹ لائف انشورنس اور نیشنل انشورنش کمپنی لمیٹڈ حکام کی بریفنگ پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے استفسار کیاکہ بتایا جائے تیس سال سے منافع میں چلنے والے ادارے یکایک خسارے میں کیسے چلے گئے ۔

جمعرات کو کمیٹی کا اجلاس چیئرمین سید خورشید شاہ کی زیر صدارت ہوا جس میں اسٹیٹ لائف انشورنس اور نیشنل انشورنس کمپنی لمیٹڈ حکام نے بریفنگ دی سید خورشید شاہ کی زیر صدارت ہونے والے پی اے سی کے اجلاس میں اسٹیٹ لائف انشورنس کی دس سالہ کارکردگی پر بریفنگ دیتے ہوے چیئرمین نے بتایاکہ وزیر قومی ہیلتھ انشورنس اسکیم پر بھی اسٹیٹ لائف انشورنس کے ذریعے ہی عمل کیا جا رہا ہے خورشید شاہ نے سوال کیا اسکیم کے تحت ہسپتالوں اور اضلاح کی نشاندہی کون کرتا ہے اس سلسلے میں چھوٹے صوبوں کو نظر اندازکیا گیا ہے جس پر حکام نے بتایا کہ ہسپتالوں اور اضلاع کی نشاندہی وزارت اور اسٹیٹ لائف نہیں صوبے کرتے ہیں۔

اسٹیٹ لائف میں خسارے کے حوالے سے کمیٹی ارکان نے سوال کیا کہ 2012-13تک منافع میں چلنے والا ادارہ یک دم کیسے خسارے میں چلاگیا۔جس پر حکام نے وضاحت پیش کی کہ گزشتہ دو تین سال میں جنوبی پنجاب میں ذرعی ترقی میں آنے والی کمی کی وجہ سے اسٹیٹ لائف انشورنس بھی متاثرہوئی ہے۔آڈیٹر جنرل آ

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

17/11/2016 - 19:43:37 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان