سپریم کورٹ، فیڈرل سروسز ٹربیونل کے چیئرمین و ممبران کی تعیناتی کیس کی سماعت،وفاق ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات نومبر

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:23:18 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:23:15 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:02:55 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:02:52 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:02:50 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:02:47 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:02:45 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:02:40 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:02:37 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:02:35 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:02:33
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

سپریم کورٹ، فیڈرل سروسز ٹربیونل کے چیئرمین و ممبران کی تعیناتی کیس کی سماعت،وفاق سے آج جواب طلب

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 نومبر2016ء) سپریم کورٹ میں فیڈرل سروسز ٹربیونل کے چیئرمین و ممبران کی تعیناتی کے حوالے سے کیس کی سماعت چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں جسٹس اعجاز افضل ‘ جسٹس امیرہانی مسلم‘ جسٹس اعجاز الاحسن‘ اور جسٹس مشیر عالم پر مشتمل پانچ رکنی بنچ نے کی عدالت نے چیف جسٹس آف پاکستان سے مشاورت کے بغیر فیڈرل ٹربیونل کے چیئرمین کی تعیناتی کے حوالے سے وفاق سے آج( جمعہ کو ) جواب طلب کرلیا ہے کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ مین ججز کیلئے عمر کی حد مقرر ہے لیکن فیڈرل سروس ٹربیونل میں عمر کی کوئی حد نہیں ہے۔

70 سے 80 سال کی عمر کے لوگوں پر مشتمل کمیشن بنایا گیا ہے جنکو ہاتھ سے پکڑ کر لایا جاتا ہے ٹربیونل میں حکومت مرضی کے فیصلے حاصل کرنے کیلئے منظور نظر لوگوں کو بھرتی کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ باداشاہت ہے کہ ٹربیونل کے ممبران کام بھی نہیں کرتے اور چیئرمین کو چیف جسٹس کی مشاورت کے بغیر بھی تعینات کیا جارہا ہے۔ چیئرمین فیڈرل ٹربیونل سروسز کیلئے کوئی عمر کی ہد نہیں ہے۔

جو افسران اپن اننگز کھیل چکے ہوتے ہیں ان کو ریٹائرمنٹ کے بعد مصروف رہنے کیلئے نوکریاں کرتے ہیں لیکن کام میںکوئی دلچسپی نہیں لیتے۔ فیڈرل سروسز ٹربیونل کو آزاد ادارے کے طور پر کام کرنا چاہیے۔ آج تک اس کے رولز نہیں بنائے گئے اور نہ عمر کا تعین کیا گیا ہے۔ انہوں نے حکومت کو فوری رولز بنانے کے حوالے سے اقدامات اٹھانے کا حکم دیا ہے۔ جسٹس امیر

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

17/11/2016 - 19:02:47 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان