پاک چین مشترکہ بحری مشقیں ہاربر اور سی فیز پر مشتمل ہیں جس میں باہمی ملاقاتیں، ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:44:29 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:44:28 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:44:24 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:44:18 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 17:44:37 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:42:09 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:42:06 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:42:05 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:42:02 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:42:00 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:41:58
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

پاک چین مشترکہ بحری مشقیں ہاربر اور سی فیز پر مشتمل ہیں جس میں باہمی ملاقاتیں، دونوں ممالک کے جہازوں پر دوروں کے تبادلے، آپریشنل سرگرمیوں اور دوسرے امور پر بات چیت شامل ہیں، پاک بحریہ کے کمانڈر 18th ڈسٹرائر اسکواڈرن کموڈور مرزا فوعاد امین بیگ

کراچی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 نومبر2016ء) پاک بحریہ کے کمانڈر 18th ڈسٹرائر اسکواڈرن کموڈور مرزا فوعاد امین بیگ نے کہا ہے کہ پاک چین مشترکہ بحری مشقیں ہاربر اور سی فیز پر مشتمل ہیں، ہاربر فیز اس وقت جاری ہے جس میں باہمی ملاقاتیں، دونوں ممالک کے جہازوں پر دوروں کے تبادلے، آپریشنل سرگرمیوں اور دوسرے امور پر بات چیت شامل ہیں جبکہ مشقوںکا سی فیز بحری جہازوں، ہیلی کاپٹرز، میری ٹائم پٹرول ائیر کرافٹ کے میری ٹائم اور بحری آپریشنز، اسپیشل فورسزکے جوائنٹ بورڈنگ آپریشنز، ائیر ڈیفنس مشقوں، رابطے کی مشقوں اور بحری جہازوں کی جنگی چالوں پر مشتمل ہوگا جو کہ کھلے سمندر میں منعقد کی جائیں گی۔

چینی بحریہ کے جہاز ’’چانگ ژنگ ڈائو‘‘ (اوشن سالویج اینڈ ریسکیو شپ) اور ’’ینڈن‘‘ پاکستان کے خیر سگالی کے دورے پر ان دنوں کراچی میں ہیں۔ پاکستان میں اپنے قیام کے دوران چینی بحری جہاز پاک بحریہ کے ساتھ چوتھی دوطرفہ بحری مشقوں میں حصہ لیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو پاک بحریہ کے فلیٹ ہیڈ کوارٹرز میں ایک مشترکہ میڈیا بریفنگ کے موقع پر کیا جس میں کمانڈر 18th ڈسٹرائر اسکواڈرن کموڈور مرزا فوعاد امین بیگ اور چینی بحریہ کے سینئر کیپٹن شی چنگ تائو نے میڈیا کے نمائندوں کو مشقوں کی تفصیلات سے آگاہ کیا۔

کموڈور فوعاد نے بتایا کہ یہ اہم مشقیں ہاربر اور سی فیز پر مشتمل ہیں۔ ہاربر فیز اس وقت جاری ہے جس میں باہمی ملاقاتیں، دونوں ممالک کے جہازوں پر دوروں کے تبادلے، آپریشنل سرگرمیوں اور دوسرے امور پر بات چیت شامل ہیں۔ مشقوںکا سی فیز بحری جہازوں، ہیلی کاپٹرز، میری ٹائم پٹرول ائیر کرافٹ کے میری ٹائم اور بحری آپریشنز، اسپیشل فورسزکے جوائنٹ بورڈنگ آپریشنز، ائیر ڈیفنس مشقوں، رابطے کی مشقوں اور بحری جہازوں کی جنگی چالوں پر مشتمل ہوگا جو کہ کھلے سمندر میں منعقد کی جائیں گی۔

مشقوں کے اغراض و مقاصد پر روشنی ڈالتے ہوئے کموڈور فوعاد نے کہا کہ ان مشقوں کا مقصد دونوں افواج کی مشترکہ بحری آپریشنز کرنے کی صلاحیت میں اضافہ کرنا ہے تاکہ ایک محفوظ اور مستحکم

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

17/11/2016 - 18:42:09 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان