یمن، فورسز اور باغیوں میں شدید جھڑپیں، 50 ہلاک
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات نومبر

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 17/11/2016 - 19:39:51 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:24:26 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:18:58 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:18:58 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:18:58 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:18:58 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:18:58 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:18:55 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:11:11 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:11:08 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 18:11:05
پچھلی خبریں - مزید خبریں

یمن، فورسز اور باغیوں میں شدید جھڑپیں، 50 ہلاک

․اتحادی فوج نے یمن کے ساحل پر 2 اسلحہ بردار کشتیاں پکڑ لیں، الحدیدہ بندرگاہ پر ہیلی کاپٹروں سے مانیٹرنگ،تلاشی پرگولہ بارود نکلا

عدن / صنعا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 نومبر2016ء) یمن کے جنوب اور مغربی علاقوں میں حکومتی فورسز اور باغیوں کے مابین شدید جھڑپوں کے دوران 50 سے زائد افراد ہلاک ہوگئے جس سے یمن میں امن کے لیے کی جانے والی کوششوں کو شدید جھٹکا لگا ہے۔یمنی فوجی ذرائع کے مطابق سعودی عرب کی سرحد کے قریب صدر عبد الربہ منصور ہادی کی حامی فورسز اور شیعہ حوثی ملیشیا کے مابین شدید جھڑپ ہوئی ہیں، یمنی فورسز نے جنوب مغربی علاقے میں ساحلی قصبہ میدی اور قریبی ہرادھ میں باغیوں سے علاقوں کا قبضہ چھڑانے کے لیے شدید حملے کیے ہیں۔

ان جھڑپوں کے دوران حکومتی فورسز کے 15 اہلکار اور باغیوں کے 23 جنگجو مارے گئے۔یمنی فوج کے ایک کرنل عبداللہ غنی الشبیلی نے بتایا کہ ہماری فورسز سعودی عسکری اتحاد کی مدد سے باغیوں کو علاقے سے نکالنے تک آپریشن جاری رکھیں گی۔ فوجی ذرائع کے مطابق وسطی شہر تعز میں بھی جھڑپوں کے دوران 9 باغی اور 4 فوجی اہلکار مارے گئے ہیں۔ عینی شاہدین کے مطابق ان شورش زدہ علاقوں میں شدید جھڑپیں جاری ہیں اور دھماکوں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

17/11/2016 - 18:18:58 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان