اقوام عالم محتسب کے اداروں کو آئینی حیثیت دیں اور بنیادی انسانی حقوق کے تحفظ کیلئے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 17/11/2016 - 16:44:06 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 16:37:12 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 16:37:03 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 16:36:05 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 16:36:05 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 16:36:05 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 16:36:05 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 16:36:05 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 16:24:20 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 16:33:15 وقت اشاعت: 17/11/2016 - 16:33:12
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:36 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:38 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:39 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 10:35:10 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 اسلام آباد کی مزید خبریں

اقوام عالم محتسب کے اداروں کو آئینی حیثیت دیں اور بنیادی انسانی حقوق کے تحفظ کیلئے مضبوط اور آزاد محتسب کی اہمیت کو تسلیم کیا جائے

بین الاقوامی محتسب انسٹیٹیوٹ کی جنرل اسمبلی کے بنکاک میں اجلاس کا مشترکہ اعلامیہ , شکایت کنندگان کو ان کے گھر کی دہلیز پر صرف 25دن میں انصا ف فراہم کیا جا رہا ہے، وفاقی محتسب حمد سلمان فاروقی کا کانفرنس سے خطاب

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 نومبر2016ء) بین الاقوامی محتسب انسٹیٹیوٹ نے اقوام عالم پر زور دیا ہے کہ وہ محتسب (اومبڈسمین) کے اداروں کو آئینی حیثیت دیں اور شہریوں کے بنیادی انسانی حقوق کے تحفظ کیلئے ایک مضبوط اور آزاد محتسب کی اہمیت کو تسلیم کیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار دنیا بھر کے محتسبین کے ادارے انٹر نیشنل امبڈسمین انسٹی ٹیوٹ (آئی او آئی) کی جنرل اسمبلی کے بنکاک میں اجلاس کے مشترکہ اعلامیہ میں کیا گیا۔

کانفرنس میں پاکستان کی نمائندگی وفاقی محتسب محمد سلمان فاروقی جو ایشین اومبڈسمین ایسوسی ایشن (اے او ای) کے صدر اورآئی او آئی ایشیاء ریجن کے صدر بھی ہیں ، نے کی۔ کانفرنس کے دس نکاتی مشترکہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ محتسب کے ادارے اپنے مینڈیٹ کے مطابق کام کر رہے ہیں لہذا ان کی آزادی و خود مختاری کو محدود کرنے کیلئے کسی قسم کی آئینی پابندیاں نہیں لگائی جانی چاہئیں۔

مشترکہ اعلامیہ میں دنیا بھر کے محتسبین پر ایسی پابندیوں کی سختی سے مخالفت کی گئی جو محتسب کے اداروں کی آزادی و خود مختاری اور آزادانہ کام کرنے کی راہ میں رکاوٹ ہوں۔ پاکستان کے وفاقی محتسب محمد سلمان فاروقی نے آئی او آئی کی جنرل اسمبلی سے اپنے خطاب میں پاکستان میں وفاقی محتسب کے کام‘ اختیارات‘ طریق کار‘ وفاقی محتسب کے نئے نئے اقدامات اور کارہائے نمایاں پر تفصیلی روشنی ڈالی۔

انہوں نے اس سال کے اوائل میں شروع کیے گئے شکایات کو جلد نمٹانے کے پروگرام سوفٹ کمپلینٹ ریزولیوشن کا بطور خاص تذکرہ کیاجس کے تحت شکایت کنندگان کو ان کے گھر کی دہلیز پر صرف 25دن میں انصا ف فراہم کیا جا رہا ہے ۔وفاقی محتسب نے کانفرنس کے شرکاء کو بتایا کہ ہمارے تفتیشی افسران ملک بھر کے 150 اضلاع اور 568 تحصیلوں کے ہیڈ کوارٹرز میں خود جا

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

17/11/2016 - 16:36:05 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان