․نئے مالی سال 2016-17 کے ابتدائی چار ماہ، برآمدات میں کمی اور درآمدات میں اضافے کے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات نومبر

کراچی

․نئے مالی سال 2016-17 کے ابتدائی چار ماہ، برآمدات میں کمی اور درآمدات میں اضافے کے نتیجے میں تجارتی خسارہ 9.31 ارب ڈالر تک پہنچ گیا

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 نومبر2016ء)نئے مالی سال 2016-17 کے ابتدائی چار ماہ جولائی تا اکتوبر 2016 کے دوران برآمدات میں کمی اور درآمدات میں اضافے کے نتیجے میں تجارتی خسارہ 9.31 ارب ڈالر تک پہنچ گیا ۔ادارہ برائے شماریات پاکستان (پی بی ایس)کے جاری کردہ اعدادو شمار کے مطابق نئے مالی سال 2016-17 کے ابتدائی چار ماہ ( جولائی تا اکتوبر 2016) کے دوران 6 ارب 43کروڑ 20لاکھ ڈالر کی برآمدات کی گئیں جو گزشتہ مالی سا ل 2015-16 کے چار ماہ( جولائی تا اکتوبر 2015) کی 6 ارب 86کروڑ 50لاکھ ڈالر کی برآمدات کے مقابلے میں 43 کروڑ 30لاکھ ڈالر کم رہیں۔

اس طرح گذشتہ سال کے مقابلے میں برآمدات میں 6.31 فیصد کمی واقع ہوئی ، دوسری جانب ملکی درآمدات پہلے چار ماہ کے دوران 15 ارب 75کروڑ 10 لاکھ ڈالر رہیں ، جو گذشتہ سال کے چار ماہ ( جولائی تا اکتوبر 2015 ) کی 14 ارب 50 کروڑ 40لاکھ ڈالر کی درآمدات کے مقابلے میں ایک ارب 24کروڑ 70 لاکھ ڈالر زائد رہیں۔اس طرح درآمدات میں 8.6 فیصداضافہ ریکارڈ کیا گیا ، اعداد و شما ر کے مطابق گذشتہ مالی سال 2015-16 کے چار ماہ جولائی تا اکتوبر 2015 کے دوران تجارتی خسارہ 7 ارب 63کروڑ 90لاکھ ڈالر تھا ، جو رواں سال کے چار ماہ جولائی تا اکتوبر 2016 کے 9 ارب 31کروڑ 90 لاکھ ڈالر کے تجارتی خسارے کے مقابلے میں ایک ارب68 کروڑڈالر زائد رہا ، اس طرح تجارتی خسارے میں 21.99 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔
17/11/2016 - 15:05:34 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان