ڈاکٹر ذاکرنائیک کی تنظیم پر پابندی اقوام متحدہ کے چارٹرکی خلاف ورزی ہے،مذہبی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 16/11/2016 - 21:24:32 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 21:24:31 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 21:24:28 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 21:24:27 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 21:18:26 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 21:18:07 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 21:08:24 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 21:08:15 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 21:08:13 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 21:02:17 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 21:02:13
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

ڈاکٹر ذاکرنائیک کی تنظیم پر پابندی اقوام متحدہ کے چارٹرکی خلاف ورزی ہے،مذہبی رہنماء

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 نومبر2016ء) مذہبی جماعتوں کے قائدین نے بھارت میں ڈاکٹر ذاکر نائیک کی تنظیم اسلامک ریسرچ فائونڈیشن پر پابندی کے فیصلہ پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈاکٹر ذاکرنائیک کی تنظیم پر پابندی اقوام متحدہ کے چارٹرکی خلاف ورزی ہے۔ ان کے خلاف جھوٹے اور بے بنیاد پروپیگنڈہ کی کوئی حقیقت نہیں۔وہ دین اسلام کی تبلیغ،ترویج و اشاعت میں مصروف ہیں۔

ان کے پروگراموں میں مسلمانوں کی طرح ہندو و دیگر مذاہب کے لوگ بھی بڑی تعداد میں شریک ہوتے ہیں۔مودی سرکار کے حالیہ فیصلہ سے بھارت کی اسلام دشمنی کھل کر سامنے آ گئی ہے اورہندوستان کے نام نہاد سیکولر ازم کے دعووں کی قلعی کھل گئی ہے۔ ہم اس فیصلے کی پرزور مذمت کرتے ہیں۔ڈاکٹر ذاکر نائیک جیسی شخصیات اور ان کی تنظیم پر پابندیاں لگا کر بی جے پی سرکار بھارت میں اسلام کی پھیلتی ہوئی دعوت کو روکنے میں کامیاب نہیں ہو سکتی۔

ان خیالات کا اظہارجمعیت علماء اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق،امیر جماعةالدعوة پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید،جماعت اسلامی کے مرکزی سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ، حافظ عبدالغفار روپڑی، سید ضیاء اللہ شاہ بخاری، علامہ ابتسام الہٰی ظہیر، علامہ زبیر احمد ظہیر و دیگر نے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ جمعیت علماء اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق نے کہاکہ بھارت کی جانب سے ڈاکٹر ذاکر نائیک کے ادارہ پر پابندی کی شدید مذمت کرتے ہیں۔

انڈیا حواس باختہ ہو چکا ہے۔ وہ مسلمانوں کا نام بھی برداشت کرنے کیلئے تیار نہیں ہے۔ مودی سرکار مسلم کمیونٹی پر تشدد اور ناروا سلوک کافی عرصہ سے جاری رکھے ہوئے ہے۔ بی جے پی کی حکومت سے کسی اچھے کام کی توقع نہیں کی جاسکتی۔ ڈاکٹر ذاکر نائیک کے ادارہ کے بعد وہ مدارس پر بھی پابندیاں لگائیں گے لیکن دین اسلام کی پھیلتی ہوئی دعوت کو وہ نہیں روک سکتے۔

جماعةالدعوة پاکستان کے امیر پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہاکہ بھارت میں جب سے بی جے پی کی حکومت آئی ہے وہ اسلام اور مسلمانوں کے خلاف پالسیوں پر عمل پیرا ہے۔کبھی گائے ذبیحہ کے نام پر مسلمانوں کے خلاف فسادات کی آگ بھڑکائی جاتی ہے تو کبھی دینی امور پر عملدرآمد میں رکاوٹیں کھڑی کی جاتی ہیں۔ڈاکٹر ذاکر نائیک کی تنظیم پر پابندیاں لگانا اسی سلسلہ کی کڑی ہے۔

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/11/2016 - 21:18:07 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان