سینیٹ قائمہ کمیٹی خزانہ کا چیئرمین ایف بی آر پر کرپشن میں ملوث اہلکاروں کے خلاف ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 16/11/2016 - 20:09:16 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 20:09:08 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 20:55:51 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 20:53:29 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 20:53:27 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 20:50:58 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 19:50:35 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 20:21:08 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 19:45:18 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 20:21:02 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 20:21:00
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

سینیٹ قائمہ کمیٹی خزانہ کا چیئرمین ایف بی آر پر کرپشن میں ملوث اہلکاروں کے خلاف ایکشن نہ لینے پر اظہار برہمی

کمشنر اسسٹنٹ کمشنر غیر ملکی کمپنی سے رشوت طلب کرتے ہیں،ایف بی آر کے اعلیٰ حکام بھی اس حوالے سے باخبر ہیں مگر انہوں نے کارروائی سے معذرت کرلی

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 نومبر2016ء)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ نے چیئرمین ایف بی آر پر کرپشن میں ملوث اہلکاروں کے خلاف ایکشن نہ لینے پر برہمی کا اظہار کیا ہے ،کمشنر اسسٹنٹ کمشنر غیر ملکی کمپنی سے رشوت طلب کرتے ہیں،ایف بی آر کے اعلیٰ حکام بھی اس حوالے سے باخبر ہیں مگر انہوں نے کارروائی سے معذرت کرلی ہے۔چیئرمین ایف بی آر نے انکشاف کیا کہ ملک میں اربوں روپے کے بے نامی اکاؤنٹس مجوود ہیں لوگوں نے اپنے ڈرائیورز اور دیگر ملازمین کے نام پر پراپرٹی رجسٹرڈ کروائی ہوئی ہے مگر ملک میں کوئی قانون موجود نہ ہونے پر ان کے خلاف کارروائی نہیں کی جاسکتی۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کا اجلاس چیئرمین کمیٹی سلیم مانڈوی والا کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہاؤس میں منعقد ہوا اس موقع پر چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ میرپور میں ایف بی آر کے افسران غیر ملکی کمپنی سے رشوت طلب کرتے ہیں اس حوالے سے وزیرخزانہ چیئرمین ایف بی آر وزیراعظم کے مشیر ہارون اختر سمیت دیگر اعلیٰ حکام کو ایکشن لینے کی ہدایت کی تھی مگر تاحال کوئی کارروائی نہیں کی گئی ہے ممبران لینڈ ریونیو رحمت اللہ وزیر کمپنی کے مالک سے بھی مل چکے ہیں جس پر چیئرمین ایف بی آر نے کہا کہ اس واقعہ کا علم نہیں،ایف بی ار کے ملازمین آزاد کشمیر میں تعینات ہیں مگر وہ ایڈمیئر کنٹرول میں آتے ہیں ان سے پوچھ گچھ نہیں کرسکتے مگر ان کو وہاں سے واپس بلا کر ان کے خلاف انکوائری کی جاسکتی ہے جس پر کمیٹی نے انہیں آئندہ میٹنگ میں اس حوالے سے رپورٹ پیش کرانے کی ہدایت کی ۔

چیئرمین ایف بی آر نے کمیٹی کو بے نامی بل2016ء پر بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ملک میں اربوں روپے کے بے نامی اکاؤنٹس موجود

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/11/2016 - 20:50:58 :وقت اشاعت