ملک اور خاص طور پر سندھ میں تقریباً ہراضلاع میں یونیورسٹی کے کیمپس قائم ہیں ،مہران ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 16/11/2016 - 18:57:14 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 18:57:11 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 18:57:10 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 18:57:06 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 18:57:05 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 18:57:02 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 18:52:33 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 18:52:33 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 18:52:33 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 18:52:33 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 18:52:33
پچھلی خبریں - مزید خبریں

ملک اور خاص طور پر سندھ میں تقریباً ہراضلاع میں یونیورسٹی کے کیمپس قائم ہیں ،مہران یونیورسٹی کی پہلی دو روزہ بین الاقوامی کانفرنس" سائنس ، ٹیکنالوجی انوویشن اینڈ منیجمنٹ کی افتتاحی تقریب سے صوبائی وزیر میر ہزار خان بجارانی کا خطاب

بھٹ شاہ- (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 نومبر2016ء) مہران یونیورسٹی کے اسنٹیٹیوٹ آف سائنس، ٹیکنالوجی اینڈ ڈویلپمینٹ کی جانب سے پہلی دو روزہ بین الاقوامی کانفرنس " سائنس ، ٹیکنالوجی انوویشن اینڈ منیجمینٹ " (STIPM) کی افتتاحی تقریب سے کراچی کی ایک ہوٹل میں مہمان خاص صوبائی وزیر برائے منصوبہ اور ترقی میر ہزار خان بجارانی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ، یونیورسٹیز اور کیمپس قائم کر کے حکومت ملک میں معلومات رکھنے والے کارآمد افراد کی تعداد میں اضافہ کرنا چاہتی ہے جو کہ کافی حد تک ہو بھی چکا ہے۔

انہو نے کہا کہ سماج میں حیقیقی ترقی تب ہی ہوگی جب معلومات رکھنے والے افراد میں اضافہ ہوگا اور سائنسی سوچ کو ترقی ملی گی۔ انہوں نے کہا کہ مہران یونیورسٹی سائنس اور ٹیکنالوجی کے حوالے سے بہتر کام کر رہی ہے ۔ انہوں نے اس موقع پر اعلان کیا کہ سندھ حکومت کے مختلف اداروں کے ملازمین کو مہران یونیورسٹی تربیتی کورس کروائے جس کے لئے ترقی اور منصوبہ بندی کا ادارہ مہران یونیورسٹی کو پانچ لاکھ روپے دے گا۔

اس موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مہران یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد اسلم عقیلی نے کہا کہ جو ملک پاکستان کے بعد آزاد ہوئے ٹیکنالوجی اور سائنس میں آگے ہونے کی وجہ سے ان کی معاشی حالت ہم سے اچھی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سائنسی کلچر کو ملک میں ترقی دلوائے بنا مجموعی طور ترقی نہیں کی جا سکتی۔ انہوں نے کہا کہ کوریا، جاپان اور سنگاپور ایسے ممالک ہیں جن کے قدرتی وسائل اتنے نہیں ہیں پر وہ سائنس اور ٹیکنالوجی میں آگے ہونے سے معاشی طور پر مضبوط ہیں ۔

ڈاکٹر محمد اسلم عقیلی نے کہا کہ تحقیق اور ایجادات کے میدان مین ملکی اسکالروں کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا، اس موقع پر ای سی او سائنس فائونڈیشن کے صدر ڈاکٹر منظور حسین سومرو نے کہا کہ معاشرے میں تنقیدی ذہن اور سوال پوچھنے والوں کی کمی ہے ہمارے پاس بچپن سے ہی سوال کرنے والے ذہنوں کو روکا جاتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بہتر اور معیاری تعلیم وہ ہی ہے جو کہ سوال پیدا کرنے کی صلاحیت پیدا کرے اور سماج کو تنقیدی شعور رکھنے والے افراد مہیا کریں ۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس کاغذوں کی حد تک کافی کام ہوتا ہے پر ان پالیسیوں اور

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/11/2016 - 18:57:02 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان