انڈونیشیا میں مسیحی گورنر پر توہین اسلام کا الزام،ملک سے باہر جانے پر پابندی عائد ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 16/11/2016 - 19:17:27 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 19:13:13 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 17:45:55 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 17:11:55 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:44:47 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:44:47 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:44:45 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:30:57 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:30:53 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:26:41 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:26:40
پچھلی خبریں - مزید خبریں

انڈونیشیا میں مسیحی گورنر پر توہین اسلام کا الزام،ملک سے باہر جانے پر پابندی عائد

جکارتہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 نومبر2016ء) انڈونیشیا کی پولیس جکارتہ کے مسیحی گورنر کے خلاف مسلمان گروپوں کی جانب سے توہین مذہب کا الزام لگائے جانے کے معاملے کی تحقیق کر رہی ہے، جب کہ گورنر کے ملک سے باہر جانے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔مسلمانوں کے سب سے بڑے ملک انڈونیشیا میں چینی نڑاد مسیحی گورنر بسوکی تھاجا پرناما پر توہین مذہب کا الزام لگنے اور ان کے خلاف جاری تحقیق کے بعد ملک میں کشیدگی اور ہنگامے بڑھنے کا امکان ہے۔

انڈونیشیا کی نیشنل پولیس کے کرمنل ڈپارٹمنٹ کے سربراہ ایری ڈونو سکامانتو کے مطابق مسیحی گورنر پر لگے توہین مذہب کے کیس کو عدالت میں پیش کیا جائے گا۔انڈونیشین انسٹی ٹیوٹ آف سائنس میں سیاست کے تجزیہ نگار ایرینی گائتری کا کہنا ہے کہ عوامی دباؤ پر اقلیتوں پر الزامات عائد کرنے سے دنیا بھر میں انڈونیشیا کے حوالے سے غلط تاثر جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ انڈونیشیا میں چھ مختلف مذاہب کے لوگ بستے ہیں اور یہاں سینکڑوں اقلیتی گروپ اپنے روایتی مذہبی طریقوں کے مطابق زندگی گزارتے ہیں۔یاد رہے کہ جکارتہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/11/2016 - 16:44:47 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان