چین دنیا کیلئے اپنے دروازے نہ تو بند کر سکتا ہے اور نہ کرے گا، شی چن پھنگ
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:26:37 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:26:35 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:26:32 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:26:31 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:26:27 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:26:26 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:14:34 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:09:41 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:09:39 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:05:11 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 16:05:10
پچھلی خبریں - مزید خبریں

چین دنیا کیلئے اپنے دروازے نہ تو بند کر سکتا ہے اور نہ کرے گا، شی چن پھنگ

عالمی سائبر سپیس گورننس سسٹم کو زیادہ منصفانہ اور موزوں بنانے کیلئے عالمی برادری کیساتھ کام کرنے پر آمادہ ہیں , ْ حکام رائے عامہ کو سمجھنے کیلئے انٹرنیٹ کا استعمال کریں،تیسری عالمی کانفرنس سے خطاب

بیجنگ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 نومبر2016ء) چین کے صدر شی چن پھنگ نے سائبر سکیورٹی کو بہتر بنانے پر زور دیا ہے اور حکام کو ہدایت کی ہے کہ وہ رائے عامہ سمجھنے کیلئے انٹرنیٹ کا استعمال کریں۔تیسری عالمی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شی نے’’سائبر سکیورٹی کے بارے میں درست صورتحال ‘‘ پرزور دیا اور فنانس ، توانائی ،تار مواصلات اور ٹرانسپورٹیشن سمیت صنعتوں میں انفارمیشن ، انفراسٹرکچر کے تحفظ کیلئے کسی سسٹم کے قیام کا مطالبہ کیا ، انہوں نے حکام پر زوردیا کہ وہ خطرات کی اطلاع دینے اور معلومات کے تبادلے کیلئے متحد اور موثر میکنزمز قائم کر یں۔

چینی صدر نے کہا کہ انٹر نیٹ دفاعی صلاحیتوں میں اضافہ کیا جانا چاہئے اور حکومتوں اور مارکیٹ فورسز کے کرداروں کی واضح طورپر وضاحت کی جانی چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ انٹرنیٹ سکیورٹی کے بارے میں اہم ممالک کے درمیان مسابقت کا دارومدار نہ صرف ٹیکنالوجی پر بلکہ نظریات اور عوامی رائے عامہ ہا پر ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ سائبر سپیس میں مشترکہ تقدیر والی برادری اور سائبر ۔

خود مختاری کے بارے میں چین کی تجاویز کی ممالک کی اکثریت نے حمایت کی ہے ۔ سائبر سکیورٹی کے تحفظ کیلئے چین کے صدرنے صنعت پر زور دیا کہ اہم انٹرنیٹ ٹیکنالوجی جس کی انہوں نے چین کی انٹرنیٹ ترقی کے طورپر نشاندہی کی اور خبردار کیا کہ دوسرے ممالک کے چابی رکھنا ہمارے لئے سب سے بڑا خطرہ ہے ، مزید تحقیق کرنے پر زور دیا ۔ انہوں نے کہا کہ انٹرنیٹ تک رسائی کو بلاک کرنا ،انٹرنیٹ کے انتظام و انصرام کا صحیح طریقہ نہیں ہے ۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ چین دنیا کیلئے اپنے دروازے نہ تو بند کر سکتا ہے اور نہ کرے گا ۔ انہوں نے ر کمپنیو ں اور تعلیمی و تحقیقی اداروں کے درمیان اتحادوں کے قیام کی تجویز پیش کی ،چینی صدر نے رائے عامہ کی نمائندگی اور رہنمائی میں انٹرنیٹ کے کردار کی ضرورت پر بھی زور دیا ۔ انہوں نے حکام کو حکم دیا کہ وہ انٹرنیٹ کو عوام کے ساتھ گھلنے ملنے ان کی تشویش اور خواہشات

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/11/2016 - 16:26:26 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان