اتحادی فوج نے یمن کے ساحل پر دو اسلحہ بردار کشتیاں پکڑ لیں
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 16/11/2016 - 13:27:20 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 13:27:16 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 13:27:13 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 13:27:10 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 13:27:09 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 13:22:19 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 13:22:14 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 13:22:11 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 13:22:08 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 13:22:06 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 13:22:05
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اتحادی فوج نے یمن کے ساحل پر دو اسلحہ بردار کشتیاں پکڑ لیں

صنعاء ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 نومبر2016ء) سعودی عرب کی قیادت میں یمن میں آئینی حکومت کی بحالی کے لیے سرگرم عرب اتحادی فوج نے یمن کی الحدیدہ بندرگاہ کے قریب دو مشتبہ اسلحہ بردار کشتیاں پکڑ لیں جن میں سے بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کیا گیا ہے۔اتحادی فوج کے مطابق یہ اسلحہ اور گولہ بارود یمنی باغیوں تک پہنچانے کی کوشش کی جا رہی تھی۔

ذرائع کے مطابق عرب اتحادی فوج کے ہیلی کاپٹروں نے یمن کے ساحل سمندر میں مانیٹرنگ کے دوران دو کشتیوں کو تیزی کے ساتھ الحدیدہ بندرگاہ کی طرف بڑھتے دیکھا تو انہیں روکنے کے لیے ان پر انتباہی فائرنگ کی گئی۔ فائرنگ کے بعد دونوں کشتیاں سمندر ہی میں رک گئیں۔اطلاعات کے مطابق اتحادی فوج کے اہلکاروں نے دونوں کشتیوں پر لادے گئے سامان کی تلاشی لی جس میں اسلحہ اور گولہ بارود کے ساتھ ساتھ جدید مواصلاتی الات بھی قبضے میں لیے گئے ہیں۔

یہ تمام اسلحہ اور الات یمنی باغیوں کو اسمگل کیے جانے کی سازش کی جا رہی تھی۔خیال رہے کہ کشتیوں کو روکنے کا واقعہ ایک ایسے وقت میں پیش آیا ہے جب دو روز پیشتر سعودی اور یمنی فوج نے الصلیف بندرگاہ کے قریب دو اسلحہ بردار کشتیاں تباہ کردی تھیں۔ ان کشتیوں پر بھی یمنی باغیوں کو اسلحہ اسمگل کرنے کی ناکام کوشش کی جا رہی تھی۔
16/11/2016 - 13:22:19 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان