امپائرز کو کرکٹ کی جانب سے گالم گلوچ اور غلط رویے کا سامنا ، تحقیقاتی رپورٹ
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید کھیلوں کی خبریں

وقت اشاعت: 16/11/2016 - 12:42:16 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 12:46:38 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 12:42:03 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 12:33:59 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 12:33:57 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 12:33:55 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 12:33:52 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 12:33:51 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 12:32:59 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 12:32:58 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 12:32:57
پچھلی خبریں - مزید خبریں

امپائرز کو کرکٹ کی جانب سے گالم گلوچ اور غلط رویے کا سامنا ، تحقیقاتی رپورٹ

لندن (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 نومبر2016ء)ایک تحقیقاتی رپورٹ میں کہاگیا ہے کہ کرکٹ میں امپائر کی کوئی عزت نہیں رہی ۔ایک برطانوی امپائر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ امپائر کے فیصلوں سے روگردانی ،ْغلط زبان ،ْتوہین آمیز رویہ ،ْحتیٰ کہ ان کی طرف تھوکنے تک کے واقعات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ،ْمیرے خیال سے یہ سب سے نفرت انگیز اور کراہت آمیز چیز ہے جب ان سے پوچھا گیا کہ یہ چیز کتنی عام ہے تو انھوں نے کہاکہ ہر میچ میں ،ْہر میچ میں گالیاں پڑتی ہیں اور میری طرف تھوکا جاتا ہے۔

میتھیو ہال پرتھ میں ویسٹرن آسٹریلیا کرکٹ ایسوسی ایشن کے امپائروں کے مینیجر ہیں اور وہ 11 برس سے امپائرنگ کر رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ آسٹریلیا کی کمیونٹی کرکٹ میں بھی ایسے واقعات پیش آتے ہیں تاہم میں یقین سے نہیں کہہ سکتا کہ اس سے اونچے درجے کی کرکٹ میں بھی ایسا ہوتا ہو گا۔ میں نے اپنے امپائروں سے بھی پوچھا۔ وہ بھی کہتے ہیں کہ گالم گلوچ تو ہوتی ہے لیکن اتنی نہیں۔

انھوں نے ایک واقعہ کا ذکر کیا جس میں امپائروں کو روشنی کم ہونے کے باعث کھیل روکنے پر کھلاڑیوں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/11/2016 - 12:33:55 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان