امریکہ میں مسلمانوں کیخلاف نفرت کے جرائم میں 67 فیصد اضافہ ریکارڈ
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 16/11/2016 - 09:25:40 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 09:25:40 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 11:00:36 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 11:00:36 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 11:00:36 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 11:00:35 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 10:58:08 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 10:58:08 وقت اشاعت: 16/11/2016 - 10:58:08
پچھلی خبریں -

مری

امریکہ میں مسلمانوں کیخلاف نفرت کے جرائم میں 67 فیصد اضافہ ریکارڈ

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 نومبر2016ء) امریکا کی فیڈرل بیورو آف انویسٹی گیشن (ایف بی آئی)کی جاری کردہ تازہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 2015 میں مسلمانوں کے خلاف نفرت پر مبنی جرائم میں 67 فیصد اضافہ ہوا۔ایف بی آئی کی رپورٹ کے مطابق امریکا میں 2014 کے دوران نفرت کے 5479 جرائم رپورٹ ہوئے جب کہ 2015 میں یہ تعداد بڑھ کر 5850 ہوگئی۔ رپورٹ کے مطابق سیاہ فام، غیر مسلموں اور اقلیتوں کے خلاف نفرت کے جرائم میں مجموعی طور پر اضافہ ہی دیکھنے میں آیا لیکن سب سے زیادہ اضافہ مسلمانوں کے خلاف نفرت کے جرائم میں ہوا جس کی شرح 67 فیصد تھی۔

سی این این کے مطابق 2014 میں مسلمانوں کے خلاف نفرت کے 154 جرائم رپورٹ ہوئے تھے جو 2015 میں بڑھ کر 257 ہوگئے یعنی امریکا میں مقیم مسلمانوں کو وہاں دیگر طبقات کے مقابلے میں کہیں زیادہ تعصب اور نفرت کا سامنا کرنا پڑا۔سدرن پاورٹی لا سینٹر کے مارک پوٹوک کا کہنا ہیکہ یہ 2001

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

اس خبر نوں پنجابی وچ پڑھو
16/11/2016 - 11:00:35 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان