انفرادی رویوں اور سوچ کی تبدیلی سے ہی پر امن ، بدعنوانی سے پاک مثالی معاشرے کی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل نومبر

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 15/11/2016 - 22:19:49 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 22:19:42 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 22:19:39 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 22:19:37 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 22:18:12 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 22:18:03 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 22:18:02 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 22:16:00 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 22:15:58 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 22:15:56 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 22:15:54
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کوئٹہ

کوئٹہ شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:16 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:17 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:18 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 12:46:14 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 14:33:53 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 14:33:54 کوئٹہ کی مزید خبریں

انفرادی رویوں اور سوچ کی تبدیلی سے ہی پر امن ، بدعنوانی سے پاک مثالی معاشرے کی داغ بیل ڈالی جا سکتی ہے‘ کرپشن کے تدارک کیلئے اداروں کی موجودگی کے باوجود کرپشن میں کمی نہ آنے کی بنیادی وجہ عوام کا اداروں کے ساتھ عدم تعاون ہے

جوائنٹ ڈائریکٹر کالجز ربابہ حمید درانی اور ڈائریکٹر نیب بلوچستان عبدالحفیظ صدیقی کا تقریب سے خطاب

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2016ء) جوائنٹ ڈائریکٹر کالجز ربابہ حمید درانی اور ڈائریکٹر نیب بلوچستان عبدالحفیظ صدیقی نے کہا ہے کہ انفرادی رویوں اور سوچ کی تبدیلی سے ہی پر امن ، بدعنوانی سے پاک مثالی معاشرے کی داغ بیل ڈالی جا سکتی ہے، کرپشن کے تدارک کے لیے بنائے گئے اداروں کی موجودگی کے باوجود کرپشن میں بڑے پیمانے پر کمی نہ آنے کی بنیادی وجہ عوام کا ان اداروں کے ساتھ عدم تعاون ہے ان خیا لا ت کا اظہا ر انہوں نے گورنمنٹ گرلز انٹر کالج سیٹلائٹ ٹاؤن کو ئٹہ میں نیب بلوچستان کے زیر اہتمام ضلع کوئٹہ کے انٹر کالجز تقریری مقابلوں کی تقریب سے خطاب کر تے ہو ئے کیا ۔

جوائنٹ ڈائریکٹر کالجز ربابہ حمید درانی نے طلباء کے کرپشن کے خاتمے کے لیے جذبات کو سراہتے ہوئے کہا کہ خود احتسابی کے عمل سے ہی معاشرے میں مثبت تبدیلی کی امید باندھی جا سکتی ہے انھوں نے طلباء پر زور دیا کہ وہ اپنی روزمرہ زندگی میں کرپشن سے اجتناب برتیں انھوں نے مزید کہا بغیر اجازت کسی کی معمولی چیز استعمال کرنے کو برا نہیں سمجھا جاتا حالانکہ یہ بھی کرپشن کے زمرے میں آتا ہے۔

مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کا

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/11/2016 - 22:18:03 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان