بھارت کا جارحانہ رویہ خطے کے امن و استحکام کیلئے خطرہ ہے، پاکستان بھارت کے ان ہتھکنڈوں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل نومبر

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 15/11/2016 - 19:32:18 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 18:49:00 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 18:33:28 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 18:33:27 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 17:51:43 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 17:46:51 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 17:18:36 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 17:14:07 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 17:27:06 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 17:27:06 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 17:27:06
پچھلی خبریں - مزید خبریں

بھارت کا جارحانہ رویہ خطے کے امن و استحکام کیلئے خطرہ ہے، پاکستان بھارت کے ان ہتھکنڈوں سے مرعوب نہیں ہو گا‘ بھارت سے اپنے فوجیوں کی شہادت کا بدلہ لینے کا حق محفوظ رکھتے ہیں، بین الاقوامی برادری کو پاکستان کیخلاف بھارتی عزائم ناکام بنانے کیلئے مزید کوششیں کرنی چاہئیں ، پاکستانی عوام اور سیکیورٹی ادارے دہشت گردی کی عفریت کو اپنی سرزمین سے مٹانے کیلئے پر عزم ہیں،دہشتگردی کیخلاف پاکستان کی قربانیوں کو بین الاقوامی برادری تسلیم کرے ،ہمسایوں کے ساتھ بہتر تعلقات پاکستان کی خارجہ پالیسی کا بنیادی اور اہم عنصر ہے ، تھریسا مے کے دور ہ پاکستان سے مختلف سطحوں پر جاری پاکستان اور برطانیہ مابین تعاون کو مزید تقویت ملے گی

وزیر داخلہ چوہدری نثار کی برطانوی وزیر اعظم تھریسا مے اور قومی سلامتی مشیر مارک لائل گرانٹ سے ملاقات میں گفتگو

لندن (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2016ء)وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ بھارت کا استبدادانہ اور جارحانہ رویہ خطے کے امن اور استحکام کیلئے خطرہ ہے، پاکستان بھارت کے ان ہتھکنڈوں سے مرعوب نہیں ہوگا،بھارت کی جانب سے اپنے فوجیوں کو شہید کئے جانے پر بدلہ لینے کا حق محفوظ رکھتے ہیں، بین الاقوامی برادری کو پاکستان کیخلاف بھارتی عزائم ناکام بنانے کیلئے مزید کوششیں کرنی چاہئیں ، پاکستانی عوام اور سیکیورٹی ادارے دہشت گردی کی عفریت کو اپنی سرزمین سے مٹانے کیلئے پر عزم ہیں،دہشت گردی کیخلاف پاکستان کی قربانیوں کو بین الاقوامی برادری تسلیم کرے، پرامن اور مستحکم افغانستان پاکستان کے مفاد میں ہے، ہمسایوں کے ساتھ بہتر تعلقات پاکستان کیخارجہ پالیسی کا بنیادی اور اہم عنصر ہے ، تھریسا مے کے دور ہ پاکستان سے مختلف سطحوں پر جاری پاکستان اور برطانیہ کے مابین تعاون کو بھی مزید تقویت ملے گی۔

وہ منگل کو ٹین ڈاننگ سٹریٹ میں برطانوی وزیر اعظم تھریسا مے اور برطانوی قومی سلامتی کے مشیر سر مارک لائل گرانٹ سے ملاقات میں گفتگو کر رہے تھے۔ اس موقع پر برطانوی وزیر اعظم تھریسا مے نے وزیر اعظم نواز شریف اور پاکستانی عوام کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ 2017کے آغاز میں شیڈول اپنے دورے پاکستان کی منتظر ہوں،وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے برطانوی وزیر اعظم کو عہدہ سنبھالنے پر مبارکباد دیتے ہوئے امید کا اظہار کیا ان کے دورِ اقتدارمیں پاک برطانیہ تعلقات مزید مستحکم ہوں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ تھریسا مے کے دور ہ پاکستان سے مختلف سطحوں پر جاری پاکستان اور برطانیہ کے مابین تعاون کو بھی مزید تقویت ملے گی۔ وزیرِداخلہ کا کہنا تھا کہ جنوبی ایشیا میں پائی جانے والی حالیہ علاقائی صورتحال کے تناظر میں وزیرِاعظم تھریسہ مے کا دورہ بہت اہم، موزوں اور بر وقت ہوگا اور اس سے دو طرفہ اور کثیر الاطراف تعاون اور کوارڈینیشن کو مزید فروغ ملے گا۔

برطانوی نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر سے ملاقات کے دوران وزیرِداخلہ چوہدری نثارنے اس امر پر زور دیا کہ بین الاقوامی برادری اور خصوصا دوست ممالک خطے میں بھارتی ہٹ دھرمی پر توجہ دیں اور اپنے ردعمل کا اظہار دیں۔ انہوں نے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/11/2016 - 17:46:51 :وقت اشاعت