انسانی حقوق کی تنظیمیں مولانا برکاتی کو سرینگر جیل منتقل کرانے میںکردار ادا کریں،آزادی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل نومبر

مزید کشمیر کی خبریں

وقت اشاعت: 15/11/2016 - 14:45:52 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 14:45:51 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 14:45:51 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 14:39:20 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 14:39:19 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 14:39:18 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 14:39:15 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 14:39:14 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 14:39:12 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 14:39:11 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 14:39:10
پچھلی خبریں - مزید خبریں

انسانی حقوق کی تنظیمیں مولانا برکاتی کو سرینگر جیل منتقل کرانے میںکردار ادا کریں،آزادی پسند رہنماء کی اہلیہ کی اپیل

مالی حالت بہت کمزرو ہے ،شوہر سے ملنے کوٹ بھلوال جیل جموں نہیں جاسکتی، صحافیوں سے گفتگو

سرینگر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2016ء)مقبوضہ کشمیر میںغیر قانونی طور پر نظربندحریت رہنما مولانا سرجان برکاتی کی اہلیہ نے انسانی حقوق کی تنظیموں سے اپیل کی ہے کہ وہ ان کے شوہر کوکوٹ بھلوال جیل جموں سے سرینگر منتقل کرانے میں اپنا کردار ادا کریں۔کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق مولانا برکاتی کی اہلیہ نے سرینگر میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ان کی مالی حالت بہت کمزرو ہے اور وہ اپنے شوہر سے ملنے کوٹ بھلوال جیل جموں نہیں جاسکتی ہیں۔

مولانا برکاتی کو جو آزادی کے حق میں مخصوص انداز میں نعرے لگانے کی وجہ سے ا ٓزادی چاچا اور پائڈ پائپر آف کشمیر کے نام سے معروف ہیں،یکم اکتوبرکو آرونی جاتے ہوئے جنوبی کشمیرکے علاقے ونپوہ سے گرفتار کیا گیا تھا جہاں ان کو ایک ریلی سے خطاب کرنا تھا۔ ان کے اوپر فوری طور پرکالا قانون پبلک سیفٹی ایکٹ لاگو کیا گیا۔ مولانا برکاتی کی اہلیہ نے صحافیوں کو بتایاکہ ان کے شوہر کی زیر حراست موت کے بارے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/11/2016 - 14:39:18 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان