طواف کی ابتداء اور اختتام کے مقام کو واضح کرنے کے لئے بیت اللہ کے غلاف پر حجر اسود ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل نومبر

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 15/11/2016 - 13:45:53 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 13:45:53 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 13:45:53 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 13:26:39 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 13:26:37 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 12:58:30 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 12:58:28 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 12:58:27 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 12:57:18 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 12:57:18 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 12:57:18
پچھلی خبریں - مزید خبریں

طواف کی ابتداء اور اختتام کے مقام کو واضح کرنے کے لئے بیت اللہ کے غلاف پر حجر اسود کے اوپر پانچ قندیلوں کا اضافہ

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2016ء)مکہ المکرمہ میں بیت اللہ کے غلاف پر سونے کی کڑھائی سے تیار کی گئی پانچ قندیلوں کا اضافہ کر دیا گیا ہے جن پر " اللہ اکبر " تحریر کیا گیاہے۔ ان پانچ قندیلوں کو خانہ کعبہ میں حجر اسود سے ملحق زاویے کے خط پر لگایا گیا ہے۔ حرمین شریفن کے امور کی جنرل پریذیڈنسی نے اپنے ٹویٹس کے ذریعے بتایا ہے کہ مذکورہ قندیلوں کو لگانے کا مقصد طواف کی ابتداء اور اختتام کے مقام کو واضح کرنا ہے۔

یہ قندیلیں بیت اللہ کے غلاف کسوہ پر اٴْس نئی آرائش لگائے جانے کے ایک ماہ بعد سامنے آئی ہیں جس کے تحت رکن یمانی کے اوپر خانہ کعبہ کے پہلو میں سونے سے کڑھا ہوا مستطیل شکل کا نشان لگایا گیا تھا۔ اس کے علاوہ رکن یمانی کے گرد دائرے کی شکل میں ایک دوسری سنہری آرائش اور میزابِ رحمت کے گرد ایک اور آرائش کو لگایا گیا ۔حجر اسود کے اوپر پھیلے ہوئی یہ سنہری قندیلیں حرم مکی کی تاریخ میں وہ چوتھی نشانی ہے جس کو معتمرین اور حجاج کے واسطے طواف

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/11/2016 - 12:58:30 :وقت اشاعت