پاکستان میں ذیابیطس کی شرح میں خطر نا ک حد تک اضا فہ
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل نومبر

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 15/11/2016 - 13:41:36 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 13:41:33 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 13:44:29 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 13:15:46 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 12:54:58 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 12:54:58 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 12:54:58 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 12:52:37 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 11:19:06 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 10:53:25
پچھلی خبریں -

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:14 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:15 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:18 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:19 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:59:54 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:59:56 اسلام آباد کی مزید خبریں

پاکستان میں ذیابیطس کی شرح میں خطر نا ک حد تک اضا فہ

صرف 1998 میں 70 لاکھ پاکستانی ذیابیطس کے شکار تھے جب کہ اب یہ تعداد 3 سے 4 کروڑ تک پہنچ چکی ہے، ما ہر ین

اسلا م آ با د(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2016ء)پاکستان دنیا کے ان ممالک میں شامل ہے جہاں بقیہ دنیا کے مقابلے میں ذیابیطس کی شرح میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے اور اس کی وجہ ذہنی تناؤ، غیرصحتمند طرزِ زندگی اور کھانے پینے میں بد احتیاطی شامل ہے۔اس ضمن میں 1994 سے 1998 میں صحت کی عالمی تنظیم (ڈبلیو ایچ او) اور پاکستان میں ذیابیطس ایسوسی ایشن سے ایک سروے کیا گیا تھا اور محتاط اندازہ لگایا گیا تھا کہ اس وقت پاکستان میں اس کے 70 لاکھ مریض موجود تھے جب کہ اس کے بعد کوئی نیا سروے نہیں کیا گیا ،اب ماہرینِ صحت کیمطابق پاکستان کی قریباً 20 فیصد آبادی ذیابیطس کی شکار ہے اور یہ تعداد 3 سے 4 کروڑ تک ہوسکتی ہے تاہم فیلڈ میں موجود معالجین کے مطابق یہ تعداد بہت ذیادہ بھی ہوسکتی ہے۔

پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسس ( پمز) میں ذیابیطس کے ڈاکٹر جمال ظفر کے مطابق ان کے ادارے میں اوپی ڈی کا ہر تیسرا مریض ذیابیطس کا شکار ہے۔ ڈاکٹر ظفر نے بتایا کہ اس ضمن میں جب راولپنڈی کے نواح میں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/11/2016 - 12:54:58 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان