پانامہ لیکس کیس، 1947سےحساب شروع کیاتو20سال تک فیصلہ نہیں ہوسکےگا،چیف جسٹس
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 15/11/2016 - 11:01:14 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 10:55:49 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 10:50:06 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 10:44:09 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 10:08:18 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 10:08:18 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 09:30:38 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 09:18:27 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 09:03:13 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 09:03:13 وقت اشاعت: 15/11/2016 - 09:00:33
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

پانامہ لیکس کیس، 1947سےحساب شروع کیاتو20سال تک فیصلہ نہیں ہوسکےگا،چیف جسٹس

تحریک انصاف کے جمع کرائے گئے اخباری تراشے مسترد

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔15نومبر۔2016ء) سپریم کورٹ میں پامانہ لیکس کیس کی سماعت شروع ہو گئی ہے۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں5رکنی لارجربینچ کیس کی سماعت کر رہا ہے۔چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے اس موقع پر کہا کہ ہم اس نکتےکو دیکھیں گے کہ جلدبازی میں انصاف کے تقاضے نظرانداز نہ ہوں۔ہم نے عمران خان کا مقدمہ اس لئے اٹھایا کہ چار پانچ اپارٹمنٹس کا سوال تھا۔

عمران خان کی درخواست کو ٹیسٹ کیس کے طور پر اٹھایا۔چیف جسٹس نے کہا کہ تحقیقات کرنا عدالت کا کام نہیں۔1947سےحساب شروع کیاتو20سال تک فیصلہ نہیں ہو سکے گا۔چیف جسٹس نے مزید کہا کہ 700صفحات ایک طرف سے، 1600دوسری طرف سے جمع کرائے گئے ۔ ہم کوئی کمپیوٹر تو نہیں ایک منٹ میں صفحات کو اسکین کرلیں ۔ہم بار بار کہہ رہے ہیں سپریم کورٹ تفتیشی ادارہ نہیں ہے۔

پانامالیکس پراتنی درخواستیں

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

اس خبر نوں پنجابی وچ پڑھو
15/11/2016 - 10:08:18 :وقت اشاعت