حکومت 2018 تک بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے وعدے پر قائم ہے، آئندہ سال کوئلے سے چلنے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر نومبر

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:57:09 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:57:08 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:57:06 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:57:05 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:57:04 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:57:03 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:57:02 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:57:01 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:55:57 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:55:57 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:55:57
پچھلی خبریں - مزید خبریں

فیصل آباد

حکومت 2018 تک بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے وعدے پر قائم ہے، آئندہ سال کوئلے سے چلنے والے پاور پلانٹ چالو ہونے کے ساتھ ہی بجلی کو سستی کرنے کا عمل بھی شروع ہو جائے گا، وزیر مملکت عابد شیر علی

فیصل آباد ۔14 نومبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 نومبر2016ء)حکومت 2018 تک بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے وعدے پر قائم ہے جبکہ اگلے سال 2017 تک کوئلے سے چلنے والے پاور پلانٹ چالو ہونے کے ساتھ ہی بجلی کو سستی کرنے کا عمل بھی شروع ہو جائے گا ۔ یہ بات پانی و بجلی کے وزیر مملکت عابد شیر علی نے فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈانڈسٹری میں تاجروں اور صنعتکاروں سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔

انہوں نے بتایا کہ لوڈ شیڈنگ کے خاتمے پر قابو پانے کیلئے ان کی حکومت بجلی کی پیداوار کو ساڑھے تیرہ ہزار سے بڑھا کے 17 ہزار تک لے گئی ہے ۔جبکہ اکتوبر2018 تک مزید 8 سے دس ہزار کلو واٹ بجلی سسٹم میں آئے گی جس سے بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا مکمل خاتمہ ہو سکے گا ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کے آنے سے قبل ملک میں 14 سے 16 گھنٹے تک کی لوڈ شیڈنگ ہو رہی تھی جبکہ ملک کا ہر طبقہ سڑکوں پر احتجاج کر رہا تھا ۔

انہوں نے بتایا کہ سابقہ حکومتوں نے بجلی پیدا کرنے کے ساتھ ساتھ بجلی کی ٹرانسمیشن پربھی ایک پائی خرچ نہیں کی جبکہ اب اربوں روپے کی لاگت سے مٹیاری سے لاہور تک نئی ٹرانسمیشن لائن بچھائی جائے گی ۔ اس سلسلہ میں بڈنگ کے ساتھ ہی لائنیں بچھانے کا کام شروع ہو جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ اس کے دوسرے مرحلے میں مٹیاری سے فیصل آباد تک ٹرانسمیشن لائن بچھائی جائے گی ۔

انہوں نے بتایا کہ اگلے سال مئی جون تک ساہیوال کا کوئلے سے چلنے والا پاور پلانٹ مکمل ہو جائے گا ۔ اس طرح تھر کول پاور پلانٹ پر بھی کام جاری ہے ۔جس سے لوگوں کو سستی بجلی مہیا کی جا سکے گی ۔ انہوں نے بتایا کہ درآمدی آر ایل این جی سے بلو کی ،بھکی اور حویلی بہادر شاہ میں آٹھ آٹھ سو میگا واٹ کے پاور پلانٹ لگائے جا رہے ہیں۔ بھکی کا پاور پلانٹ اپریل مئی میں مکمل ہو جائے گا جس کے دو دو مہینے بعد باقی دو پاور پلانٹ بھی آپریشنل ہو جائیں گے ۔

انہوں نے کہا کہ ان کی حکومت پر کرپشن کا ایک بھی الزام نہیں لگایا جا سکا جبکہ صرف ان تین پاور پلانٹس سے سو ارب روپے کی بچت ہو گی ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ تربیلا فور کے منصوبے پر بھی کام جاری ہے جس سے 1300 میگا واٹ بجلی ملے گی ۔ انہوں نے چیمبر کے ممبران کو ان منصوبوں کے دور ے کی بھی دعوت دی اور کہا کہ ان کو دیکھ کر انہیں معلوم ہو گا کہ حکومت لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کیلئے کتنی سنجیدہ ہے ۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ فیصل آباد سمیت دیگر دس تقسیم کار کمپنیوں میں فل لوڈ پر سسٹم کو چلایا گیا فیصل آباد میں اس سلسلہ میں کوئی دقت پیش نہیں آتی جبکہ باقی کمپنیوں میں پیش آنے والے مسائل کو بتدریج حل کیا جا رہا ہے ۔ عابد شیر علی نے بتایا کہ فیصل آباد واپڈا انجینئرنگ اکیڈمی کو یونیورسٹی کا درجہ دینے کا فیصلہ ہو گیا ہے ۔

جبکہ اسلام آباد میں بھی واپڈا یونیورسٹی کیلئے زمین حاصل کی جار ہی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ اس سلسلہ میں صدر ممنون حسین سے ان کا سنگ بنیاد رکھنے کیلئے وقت مانگا ہے اور توقع ہے کہ بہت جلد ان پر کام بھی شروع ہو جائے گا ۔ گیس سمیت شہر کے دیگر مسئلوں کے بارے میں وزیر مملکت نے کہا کہ صنعتکار اپنے مسائل کامشترکہ ایجنڈا بنا لیں تاکہ وہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

14/11/2016 - 22:57:03 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان