بلوچستان میں رواں سال دہشتگردی واقعات میں 280سے زائد افراد لقمہ اجل بنے
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر نومبر

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:55:57 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:55:57 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:54:14 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:51:56 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:51:55 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:50:21 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:50:19 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:50:18 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:50:14 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:50:12 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:50:10
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کوئٹہ

کوئٹہ شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 19/01/2017 - 14:56:37 وقت اشاعت: 19/01/2017 - 16:17:21 وقت اشاعت: 19/01/2017 - 16:33:58 وقت اشاعت: 19/01/2017 - 16:38:13 وقت اشاعت: 19/01/2017 - 16:45:01 وقت اشاعت: 19/01/2017 - 16:45:04 کوئٹہ کی مزید خبریں

بلوچستان میں رواں سال دہشتگردی واقعات میں 280سے زائد افراد لقمہ اجل بنے

155پولیس، ایف سی اور لیویز اہلکار بھی شامل , صرف گزشتہ تین ماہ میں تین بڑے دہشتگرد حملوں میں 180زائد افراد جاں بحق ،دس ماہ میں 585زخمی بھی ہوئے، سرکاری اعداد و شمار

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 نومبر2016ء)بلوچستان میں رواں سال دہشتگردی کے واقعات میں 280سے زائد افراد لقمہ اجل بنے جن میں155پولیس، ایف سی اور لیویز اہلکار بھی شامل ہیں۔ صرف گزشتہ تین ماہ کے دوران تین بڑے دہشتگرد حملوں میں 180زائد افراد جاں بحق ہوئے۔دس ماہ میں 585زخمی بھی ہوئے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق رواں سال پہلے دس ماہ میں خودکش حملوں ،بم دھماکوں، ٹارگٹ کلنگ سمیت دہشتگردی کی145واقعات میں 240افراد جاں بحق جبکہ485افراد زخمی ہوئے۔

جبکہ ہفتہ کو خضدار کی تحصیل سارونہ کے علاقے شا ہ نورانی کے مزار میں ہونے والے خودکش حملے میں40سے زائد افراد جاں بحق اور100سے زائد زخمی ہوئے اس طرح رواں سال دہشتگردی کے واقعات میں جاں بحق افراد کی تعداد280سے زائد ہوگئی ہے جبکہ زخمیوں کی تعداد 585سے زائد بنتی ہے۔ اعداد و شمار کے مطابق 109پولیس اہلکار ،37ایف سی اہلکار،9لیویز اہلکار وں نے دہشتگردی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

14/11/2016 - 22:50:21 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان