وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی برطانوی ہم منصب امبررڈ سے ملاقات
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر نومبر

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:59:44 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:26:47 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:55:57 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:48:09 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:48:06 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:25:53 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:25:52 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:22:31 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:22:29 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:22:25 وقت اشاعت: 14/11/2016 - 22:22:24
- مزید خبریں

وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی برطانوی ہم منصب امبررڈ سے ملاقات

پاک برطانیہ تعلقات، سیکیورٹی، انسداد دہشت گردی، غیر قانونی تارکین وطن، منظم جرائم، انسداد منشیات، منی لانڈرنگ سمیت مختلف امور پر تبادلہ خیال , وزیر داخلہ نے برطانوی منصب کو حال ہی میں منظور شدہ سائبر کرائم کی روک تھام سے متعلق بل کے بارے میں بھی آگاہ کیا

لندن ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 نومبر2016ء) وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے پیر کو یہاں برطانوی ہم منصب امبررڈ سے ملاقات کی۔ انہوں نے پاک برطانیہ تعلقات، سیکیورٹی، انسداد دہشت گردی، غیر قانونی تارکین وطن، منظم جرائم، انسداد منشیات، منی لانڈرنگ سمیت مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا۔ وزیر داخلہ نے برطانوی منصب کو حال ہی میں منظور شدہ سائبر کرائم کی روک تھام سے متعلق بل کے بارے میں بھی آگاہ کیا جس سے انٹرنیٹ سے متعلقہ جرائم کی روک تھام میں مدد ملے گی۔

برطانوی ہم منصب سے بات چیت کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ سائبر کرائم قانون سے انٹرنیٹ کے ذریعے نفرت انگیز مواد کی تشہیر کو روکنے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ سائبر قوانین کے مؤثر نفاذ اور اسے مزید فعال بنانے کیلئے برطانیہ کی تکنیکی معاونت مددگار ثابت ہو گی۔ اس موقع پر برطانوی وزیرداخلہ نے پاکستان میں حالیہ دہشت گردی کے واقعات کی مذمت کرتے ہوئے قیمتی جانی نقصان پر گہرے دکھ کا اظہار کیا۔

برطانوی وزیر داخلہ نے دوطرفہ اعلیٰ سطحی وفود کے تبادلوں کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ دوطرفہ دوروں سے سیکیورٹی سمیت مختلف امور میں تعاون کو مزید فروغ ملتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ جلد پاکستان کا دورہ کریں گی جس سے دوطرفہ تعلقات اور باہمی تعاون کو مزید فروغ ملے گا۔ برطانیہ کی سابق وزیر داخلہ اور موجودہ وزیرِاعظم تھریسامے کے ساتھ اپنے بہترین تعلقات کا حوالہ دیتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ تھریسامے کے دور میں دوطرفہ تعلقات میں جس قدر مضبوطی آئی اسے مزید آگے لے جانے کی ضرورت ہے تاکہ دونوں ملکوں کے درمیان قائم شراکت داری سے دوطرفہ طور پر استفادہ کیا جا سکے۔

انہوں نے کہا کہ اس طرح کے اعلیٰ سطحی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

14/11/2016 - 22:48:06 :وقت اشاعت