امریکا ،دہشت گردی کے شبے میں گرفتار کیے جانے پر مسلمان لڑکی کا پولیس پر مقدمہ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ اگست

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 12/08/2016 - 16:37:56 وقت اشاعت: 12/08/2016 - 16:37:56 وقت اشاعت: 12/08/2016 - 15:29:01 وقت اشاعت: 12/08/2016 - 15:29:01 وقت اشاعت: 12/08/2016 - 15:28:16 وقت اشاعت: 12/08/2016 - 15:28:14 وقت اشاعت: 12/08/2016 - 15:24:18 وقت اشاعت: 12/08/2016 - 15:24:18 وقت اشاعت: 12/08/2016 - 15:24:18 وقت اشاعت: 12/08/2016 - 14:38:53 وقت اشاعت: 12/08/2016 - 14:38:18
پچھلی خبریں - مزید خبریں

امریکا ،دہشت گردی کے شبے میں گرفتار کیے جانے پر مسلمان لڑکی کا پولیس پر مقدمہ

شکاگو(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔12 اگست ۔2016ء) امریکا میں گزشتہ برس غلطی سے دہشت گردی کے شبے میں گرفتار کیے جانے پر ایک مسلم لڑکی نے شکاگو پولیس کے خلاف مقدمہ درج کروا دیا۔امریکی میڈیا کے مطابق اعتماد الماتار نامی لڑکی کا موقف تھا کہ پولیس اہلکاروں نے ان کے نقاب اتارنے کی کوشش کرکے مسلمانوں کے مذہبی اقدار اور شہری حقوق کی خلاف ورزی کی۔

خیال رہے کہ گزشتہ برس 4 جولائی کو شکاگو پولیس نے سب وے اسٹیشن پر دہشت گردی کے شبے میں مسلمان لڑکی کو گرفتار کیا تھا۔رپورٹ کے مطابق کئی پولیس اہلکاروں نے اعتماد الماتار کا سب وے اسٹیشن کی سیڑھیوں تک پیچھا کیا، اس سے بدتمیزی کرتے ہوئے اس کا نقاب اتارا اور حراست میں لیا۔سب وے اسٹیشن پر نصب سیکیورٹی کیمرے نے ان مناظر کو محفوظ کیا، جس میں پولیس اہلکاروں نے کئی منٹ تک لڑکی کو پکڑنے کے لیے سیڑھیوں کی جانب بھاگتے ہوئے دیکھا گیا لیکن جلد ہی پولیس اہلکار کیمرے کی آنکھ سے اوجھل ہوتے ہوئے دیکھایا گیا ہے۔

امریکی اسلامک تعلقات کونسل (سی اے آئی آر) کے وکیل اور سول کیس کے شریک کونسل فل رابرٹسن نے پولیس اہلکاروں کے عمل کو

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12/08/2016 - 15:28:14 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان